مہنگائی کی شرح کم ہو کر 8.2 فیصد پر آ گئی ، ادارہ شماریات نے اعداد و شمارجاری کر دیئے 

مہنگائی کی شرح کم ہو کر 8.2 فیصد پر آ گئی ، ادارہ شماریات نے اعداد و شمارجاری کر ...
مہنگائی کی شرح کم ہو کر 8.2 فیصد پر آ گئی ، ادارہ شماریات نے اعداد و شمارجاری کر دیئے 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )پاکستان کے ادارہ شماریات نے اعداد و شمارجاری کر دیئے ہیں جس کے مطابق مہنگائی کی شرح جولائی کی 9.3 فیصد سے کم ہو کر اگست میں 8.2 فیصد ہو گئی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق جاری کردہ شمار سے ظاہر ہوتا ہے کہ گزشتہ ماہ کے مقابلے میں اگست میں مرغی کے گوشت کی قیمت میں 36.45 فیصد کمی آئی۔اسی طرح اگست میں ٹماٹروں کی قیمت میں 31.83فیصد، انڈوں کی قیمت میں 1.33فیصد اور تازہ پھلوں کی قیمت میں 23.15 فیصد کمی آئے۔ان کے برعکس گزشتہ ماہ کے مقابلے میں اگست کے مہینے میں گندم کی قیمت 11.95 فیصد بڑھ گئی جبکہ گندم کے آٹے کی قیمت میں 5.44 فیصد اضافہ ہوا اور گندم کی مصنوعات کی قیمت 6.85فیصد بڑھ گئی۔اسی طرح ملک بھر میں چینی کی قیمت میں 13.53 فیصد اضافہ دیکھا گیا۔

خیال رہے کہ حکومت نے مقامی مارکیٹ میں کمی کو پورا کرنے کے لیے گندم اور چینی کی درآمد کی اجازت دے دی ہے، تاہم ، ریٹیل پرائس پر اس کے اثرات ابھی تک دیکھے نہیں جاسکے۔اگست کے مہینے میں اضافے کے بعد اشیائے خوردنوش کی افراط زر کی شرح تاحال 2 ہندسوں پر مشتمل ہے۔شہری علاقوں میں اشیائے خور و نوش کی مہنگائی کی شرح میں سالانہ بنیادوں 11.3 اضافہ جبکہ ماہانہ بنیادوں پر 0.3فیصد کمی دیکھی گئی جبکہ دیہی علاقوں میں انہی اشیا کی قیمتوں کی سطح میں سالانہ بنیادوں 13.5فیصد پر برقرار رہی جبکہ اس میں ماہانہ بنیادوں پر 0.9 فیصد کمی ریکارڈ کی گئی۔

مزید :

قومی -