ہسپتال عملے نے ڈاکٹر کی غیر موجودگی میں اپنی "ڈاکٹری" کے چکر میں حاملہ خاتون اور نوزائیدہ بچے کی جان لے لی

ہسپتال عملے نے ڈاکٹر کی غیر موجودگی میں اپنی "ڈاکٹری" کے چکر میں حاملہ خاتون ...
ہسپتال عملے نے ڈاکٹر کی غیر موجودگی میں اپنی

  

میرٹھ (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی ریاست اتر پردیش میں ہسپتال سٹاف کی لاپرواہی نے نوزائیدہ بچے اور ماں کی جان لے لی۔

میرٹھ میں وکاس راٹھی نامی شہری اپنی حاملہ بیوی نیتو کو لے کر شیوایا ہسپتال میں آیا۔ وکاس نے ہسپتال آنے سے پہلے ڈاکٹر سے بات کی تھی اور اسی نے ہسپتال پہنچنے کی ہدایت دی تھی ۔ جب نیتو کو ہسپتال لے جایا گیا تو ڈاکٹر وہاں موجود نہیں تھی جس پر ہسپتال کے عملے نے اپنی "ڈاکٹری" شروع کردی۔

خاتون کا کیس سرجیکل ڈلیوری کا تھا لیکن ہسپتال عملے نے نارمل ڈلیوری کرانے کی کوشش کی اور اسی میں زچہ اور بچہ کی موت واقع ہوگئی۔ بعد ازاں عملے نے خاتون کے لواحقین کے ساتھ بدسلوکی بھی کی جس پر پولیس میں رپورٹ کی گئی۔ پولیس نے ہسپتال عملے کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے جبکہ ہسپتال کے ایم ایس کا کہنا ہے کہ غفلت کے مرتکب افراد کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -