جاپانی حکومت نے توانائی کے شعبہ میں بڑے پیمانے پر اصلاحات کے منصوبے کی منظوری دیدی

جاپانی حکومت نے توانائی کے شعبہ میں بڑے پیمانے پر اصلاحات کے منصوبے کی ...

ٹوکیو(اے پی پی) جاپانی حکومت نے توانائی کے شعبہ میں بڑے پیمانے پر اصلاحات کیلئے منصوبے کی منظوری دیدی۔ جاپان میں 2011ءمیں فوکوشیما جوہری پلانٹ کی زلزلہ و سونامی سے تباہی کے بعد شعبہ توانائی میں مکمل اصلاحات کی ضرورت محسوس کی جا رہی تھی۔ منگل کو جاپان کی کابینہ نے ایک بڑے اصلاحاتی منصوبے کی منظوری دیدی ہے جس کیلئے توثیق پارلیمنٹ سے لی جائے گی۔ پارلیمنٹ سے منصوبے کی توثیق کی صورت میں جاپان میں شعبہ تو انائی میں 1950 کی دہائی کے بعد پہلی بڑی بڑی اصلاحات عمل میں لائی جائیں گی۔ جاپان میں اس وقت شعبہ توانائی دس علاقائی توانائی کے فرموں کے قبضے میں ہے جو پاور جنریشن، ڈسٹری بیوشن اور ریٹیل سیلز کی ذمہ دار ہیں۔

 نئے منصوبے کے تحت توانائی کی یوٹیلٹی کو دوسری بزنس لائنز سے علیحدہ کر دیا جائے گا جبکہ بجلی کی قیمتوں پر عائد پابندی بھی 2018ءتک ختم کر دی جائے گی۔

مزید : کامرس


loading...