پاکستان کا گردشی قرضہ 500 ارب روپے سے بڑھ گیا

پاکستان کا گردشی قرضہ 500 ارب روپے سے بڑھ گیا

اسلام آباد ( آئی این پی) پاکستان کا گردشی قرضہ 500 ارب روپے سے بڑھ گیا ، پبلک سیکٹر کمپنیوں کے نئے قواعدوضوابط پر عملدرآمدنہ ہونے سے گردشی قرضے میں اضافے کا رجحان جبکہ وزارت خزانہ محض سبسڈی دیکر پرانے طریقے استعمال کرکے گردش قرضے کو کنٹرول کرنے کی ناکام کوشش کررہی ہے۔ منگل کو وزارت خزانہ کے ذرائع کے مطابق پاکستان کا گردش قرضہ جوکہ 6ماہ قبل 400 ارب ڈالر تھا بڑھ کر 500 ارب ڈالر تک پہنچ گیا ہے جبکہ وزارت خزانہ نے مختلف مدات میں اربوں روپے کی سبسڈی دیکر گردش قرضے کو کنٹرول کرنےکی کوشش کی جوکہ بے سود رہی۔ واضح رہے کہ فروری 2013ءمیں سابق حکومت نے گردش قرضے پر قابو پانے اور سرکاری اداروں کی کارکردگی بہتر بنانے کیلئے پبلک سیکٹر کمپنیوں کے نئے قواعدوضوابط کی منظوری دی تھی مگر ایک ماہ سے زیادہ عرصہ گزر جانے کے باوجود ان پر عملدرآمد نہیں ہوسکا جبکہ دوسری جانب گردش قرضہ مسلسل بڑھ رہا ہے اگر نگران حکومت نے دو ماہ کے اندر سخت معاشی فیصلے نہ کئے تو معیشت کا بحران بہت زیادہ بڑھ جائے گا کیونکہ پبلک سیکٹر اداروں کو دیوالیہ ہونے سے بچانے کیلئے معیشت کو مسلسل کھوکھلا کیا جا رہا ہے۔

مزید : کامرس


loading...