بھارتی حکومت مقبوضہ بالآخر پبلک سیفٹی ایکٹ پر نظرثانی کرنے پر تیار

بھارتی حکومت مقبوضہ بالآخر پبلک سیفٹی ایکٹ پر نظرثانی کرنے پر تیار

سرینگر(اے پی اے )کشمیری عوام کے شدید دباوپرحکومت مقبوضہ بالآخر پبلک سیفٹی ایکٹ پر نظرثانی کرنے پر تیار ہو گئی ۔انتقامی کارروائیوں کے تحت گرفتار کئی نوجوانوں کی رہائی کے ا مکانات روشن ،ایمنسٹی انٹرنیشنل نے انسانی حقوق کی پامالیوں کی روک تھام کے لئے قلم اٹھاﺅں مہم شروع کر دی ۔مقامی ذرائع ابلاغ کی رپورٹ کے مطابق ریاستی حکومت کے انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں اور عوام کی طرف سے بڑھتے ہوئے دباﺅ کے باعث پبلک سیفٹی ایکٹ پر نظرثانی کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے ۔ماہرین قانون کا کہنا ہے کہ اگر کومت اس ایکٹ پر نظر ثانی کی تو پتھراﺅ اور دیگر الزامات کے تحت سینکڑوں نوجوانوں کو رہائی مل جائے گی جنہیں مبینہ طور پر انتقامی کارروائیوں کا نشانہ بنایا گیا تھا ۔دوسری جانب ماہرین قانون کے مطابق اگر حکومت پی ایس اے پر نظر ثانی کرتی ہے تو بہت سے نظر بند افراد کی رہائی کے امکانات روشن ہیں،دریں اثناءانسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل نے وزیراعلی عمر عبدا للہ پر زور دیا ہے کہ وہ دادی میں ہونے والی انسانی حقوق کی پامالیوں کو وروکنے کیلئے ”زیروٹالرئنس کے موقف کو اختیار کریں ۔ایمنسٹی نے پی ایس اے کے تحت بار بار کی گرفتاریوں پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ عمر عبدا للہ اس طریقہ کار کو روکنے کے لئے ایک حکومتی آرڈر جاری کریں ۔

مزید : عالمی منظر


loading...