خالد مشعل پانچویں باربلامقابلہ حماس کے سربراہ منتخب

خالد مشعل پانچویں باربلامقابلہ حماس کے سربراہ منتخب

قاہرہ(پی پی سی)فلسطےنی سیاسی جماعت حماس کے سیاسی شعبے کے لئے قاہرہ میں ہونے والے انتخاب میں پولٹ بیورو کے حالیہ صدر خالد مشعل کو مزید چار برسوں کے لئے تنظیم کے اہم پالیسی ساز سیاسی شعبے کا سربراہ منتخب کر لیا گیا ۔میڈیارپورٹس کے مطابق انتخابی عمل قاہرہ کے ایک مقامی ہوٹل میں ہوا۔ خالد مشعل کوشو آف ہینڈکے ذریعے سیاسی شعبے کا سربراہ منتخب کرنے کی تجویز کو فلسطین سے حماس کے ایک اہم رہنما نے مسترد کرتے ہوئے خفیہ رائے شماری کا مطالبہ کیا، جس کے نتائج سامنے آنے پر خالد مشعل کامیاب قرار پائے۔ خالد مشعل تیرہ برس دمشق میں مقیم رہے، ان پر فلسطینی جماعتوں کے درمیان صلح صفائی کی کوششوں کی راہ میں رکاوٹ کا الزام عاید کیا جاتا رہا ہے۔ شام میں عوامی انقلاب کی جدوجہد کے آغاز سے انہیں دمشق کو خیرباد کہنا پڑا اور وہ ابتدائی طور پر دوحہ اور پھر عمان میں مقیم رہے ہیں۔ابو ولید کے اخوان المسلمون کے ساتھ مضبوط تعلقات ہیں۔ یہ تنظیم پر ضرورت کی گھڑی میں حماس کے ساتھ نظر آئی ہے۔ یہ امر اب ایک کھلا راز ہے کہ اخوان، حماس کا اہم مالی ذریعہ ہے۔غیرملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق حماس نے اس حوالے سے کوئی اعلامیہ جاری نہیں کیا تاہم پارٹی رہنماں نے اس بات کی تصدیق کی ہے۔پارٹی رہنماں نے بتایا کہ 1996 سے حماس کی قیادت کرنے والے خالد مشعل بلامقابلہ پارٹی سربراہ منتخب ہوئے ہیں۔

مزید : عالمی منظر


loading...