غرب اردن میں پرتشدد تصادم ¾ متعدد مظاہرین زخمی ہوگئے

غرب اردن میں پرتشدد تصادم ¾ متعدد مظاہرین زخمی ہوگئے

مغربی کنارہ ( اے این این )مغربی کنارے اور یروشلم کے ہزاروں فلسطینیوں نے 37 ویں 'یوم ارض' کے موقع پر مارچ اور تقریبات کا انعقاد کیا۔ اس دوران قابض اسرائیلی فوج کے ساتھ پرتشدد جھڑپوں کی اطلاعات بھی موصول ہوئی ہیں۔بییت لحم شہر میں قبر راحیل کے فوجی ناکے کے پاس نوجوانوں اور اسرائیلی فوجیوں کے درمیان جھڑپیں ہوئیں۔ مظاہرین کو اسرائیلی فوج کے داغے جانے والے آنسو گیس شیلز سے زخم بھی آئے۔یہودی آبادکاریوں کے خلاف قائم پبلک کمیٹی کے ممبر محمد بریجہ نے ایک بیان میں کہا کہ " فلسطینی عوام بیت لحم اور فلسطینی دارلحکومت یروشلم کی سرحد پر موجود ناکہ پر قابض حکام کو یہ بتانے آئے تھے کہ وہ ابھی بھی اپنی زمین سے جڑے ہوئے ہیں۔ وہ کبھی وقار کے ساتھ جینے کا حق نہیں چھوڑیں گے اور خودارادیت کے ساتھ جئیں گے۔فلسطنی قانون ساز اسمبلی کے رکن مصطفی البرغوثی نے کہا کہ مغربی کنارے اور یروشلم کے فلسطینی انہی حالات کا سامنا کررہے ہیں جن سے وہ 1948 میں گزر رہے تھے۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ یوم ارض پر احتجاج قومی اتحاد کا عکاس ہے۔

مزید : عالمی منظر


loading...