بیورو کریسی میں برییپےمانے پراکھا ڑپچھارکی تیاریاں

بیورو کریسی میں برییپےمانے پراکھا ڑپچھارکی تیاریاں

                     لاہور(الیکشن سیل)الیکشن کمیشن نے وفاقی اور صوبائی نگران حکومتوں کو تمام وفاقی اور صوبائی سیکرٹریز کو تبدیل کرنے کا حکم دے دیاہے ۔جس کے باعث چند روز میں ملک بھر کی بیوروکریسی میں بڑے پیمانے پر اکھاڑ پچھاڑ ہونے والی ہے۔اس میں ایس ایچ او سے وفاقی سیکرٹری کے عہدے کے افسر شامل ہیں۔ الیکشن کمیشن نے خود مختار اور نیم خود مختار اداروں کے سربراہان کو بھی تبدیل کرنے کا کہا ہے تاہم یہ گنجائش رکھی ہے کہ اگر حکومتیں کسی افسر کو برقرار رکھنا چاہیں تو رکھ سکتی ہیں لیکن اس سلسلہ میں کمیشن کو آگاہ کرنا لازمی ہوگا۔ بعض سیاسی جماعتوں نے سابق حکمرانوں کے تعینات کردہ افسروں پر اعتراض کیا تھا ۔ الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری نوٹیفیکیشن کے مطابق نگران حکومتوں کو حکم دیا گیا ہے کہ وہ تمام سیکرٹریوں کو تبدیل کردیں ۔ اگر وہ وفاقی اور صوبائی سیکرٹریوں کو تبدیل نہیں کرتیں تو اس حوالہ سے الیکشن کمیشن کو فوری طور پر آگاہ کیا جائے ۔تاہم شاید ہی کوئی بڑا افسر ایسا ہوگا جسے وفاقی یا کوئی صوبائی نگران حکومت اس کے عہدے پر برقرار رکھنے پر اصرار کرے، نوٹیفیکیشن میں واضح کہا گیا ہے کہ ملک بھر کے آئی جیزپولیس ، سی سی پی اوز ، کمشنرز ، ڈی سی اوز ، ڈی پی اوز ، ایس ایچ اوز اور ای ڈی اوز کو بھی فوری طور پر تبدیل کیا جائے ۔ الیکشن کمیشن نے قرار دیا ہے کہ شفاف اور غیر جانبدارانہ انتخابات کے لئے ملک بھر کے صوبائی اور وفاقی سیکرٹریز ، کمشنرز ، ڈی پی اوز اور ای ڈی اوز کو فوری طور پر تبدیل کرنا ضروری ہے ۔ کمیشن نے قرار دیا ہے کہ اگر حکومتیں ایسا سمجھتی ہیں کہ کسی عہدیدار کی کوئی خصوصی اہمیت ہے تو اسے برقرار رکھا جا سکتا ہے ۔ کمیشن نے نگران حکومتوں کو اختیار دیا ہے کہ خود مختار اور نیم خود مختار اداروں کے سربراہوں کو بھی تبدیل کیا جاسکتا ہے ۔

مزید : صفحہ اول


loading...