کنگسٹن کالج:جدید طرزِ تعلیم کی طرف اہم پیشرفت!

کنگسٹن کالج:جدید طرزِ تعلیم کی طرف اہم پیشرفت!

  

کسی بھی مُلک کی تعمیر وترقی کا دارو مدار اس کے تعلیمی اداروں پر ہوتا ہے۔پاکستان میں اب بھی ایسے اداروں کی ضرورت سے انکار نہیں کیا جا سکتا جو مُلک میں تعلیمی معیار کو بین الاقوامی معیار سے ہم آہنگ کر سکیں۔ ایسے ادارے جو جدید ترین تعلیم سے روشناس کرانے کے علاوہ اپنے طالب علموں کی کردار سازی کر کے انہیں مشکل سے مشکل مسائل سے نبرد آزما ہونے اور دُنیا میں سربلندی کے ساتھ جینے کا حوصلہ فراہم کر سکیں،ایسے ادارے جو تمام تر تفرقات سے بالا تر ہو کر تعلیم کو صرف تعلیم کے نقطہ نظر سے دیکھتے ہوں، ان کی اہمیت کسی بھی دوسرے ادارے سے کہیں بڑھ کر ہے۔ کنگسٹن کالج بھی اپنی نوعیت کا ایک ایسا ہی منفرد ادارہ ہے جو پاکستان میں اپنی مثال آپ ہے۔کنگسٹن کالج ثقافتی طور پر ایک متنوع برادری ہونے کے وعدے کے ساتھ ایک انتہائی جدید بین الاقوامی سکول ہے جو ہر طالب علموں کی ذہنی صلاحیت اور کردار کو بین الاقوامی نقطہ نظر کے ساتھ پروان چڑھانے کے لئے مثالی نصابِ تعلیم فراہم کرنے کی جدوجہد میں مصروف ہے۔ سکول کا کیمپس پودوں کی بے شمار ورائٹی کے ساتھ150 کنال کے وسیع رقبے پر پھیلا ہوا ہے، جسے 3000سے زائد طلبہ کو سمونے کے لئے ڈیزائن کیا گیا ہے۔اپر کنال جلو، لاہور میں واقع کالج تک سگنل فری سڑکوں کے ذریعے آسان رسائی حاصل ہے۔ پانچویں درجے تک سکول میں مخلوط تعلیم دی جائے گی اور اس کے بعد لڑکوں اور لڑکیوں کو دو الگ الگ بلاکس میں تقسیم کر دیا جائے گا، جن کے داخلی و خارجی راستے بھی الگ ہوں گے۔

کنگسٹن کالج میں ہر شعبے کے لئے بیرون مُلک سے تعلیم یافتہ معروف فیکلٹی موجود ہے۔ کلاس رومز انٹرایکٹو سمارٹ وائٹ بورڈز سے لیس ہیں۔ فرنچ، عربی اور مینڈرین جیسی غیر ملکی زبانوں کی تعلیم کے لئے انتہائی ماہر اساتذہ تعینات کئے گئے ہیں۔کنگسٹن کالج میں تدریس کے انتہائی جدید طریقوں کو بروئے کار لایا گیا ہے، جن کے ذریعے نوخیز طلبہ باہمی عمل کے ذریعے اور دوستانہ انداز میں سیکھتے ہیں۔ وسیع النظر، متوازن اور متحرک نصاب، تعلیم و تربیت کے تمام شعبوں کا جامع انداز میں اور بہترین طور پر احاطہ کرتا ہے۔کنگسٹن کالج اپنے طالب علموں کو نہ صرف علم کی دولت سے مالا مال کرتا ہے،بلکہ انہیں حقیقی دُنیا کے چیلنجوں کا مقابلہ کرنے کے لئے بھی تیار کرتا ہے۔ یہ نوخیز اذہان کو اپنے خوابوں کو پایۂ تکمیل تک پہنچانے کی تحریک فراہم کرتا ہے، چاہے انہیں پورا کرنا کتنا ہی دشوار کیوں نہ ہو۔ کنگسٹن کالج تخلیقی انداز میں سوچنے اور کسی بھی مسئلے کو منظم طریقے اور سائنسی انداز میں حل کرنے کے لئے ان کی حوصلہ افزائی کرتا ہے۔نصاب کا مربوط تسلسل بامقصد طریقے سے سیکھنے میں آسانی پیدا کرنے کے لئے ڈیزائن کیا گیا ہے اور یہ تعلیمی تعطل اور فالتو تکرار سے پاک ہے۔ یہ فکری، ذاتی، جذباتی اور سماجی ترقی کے ذریعے ایک مکمل شخصیت تشکیل دینے کے لئے تعلیم کو فروغ دینا ہے۔

اپنے طلبہ کی جسمانی اور ذہنی نشوونما کے لئے کنگسٹن کالج میں ہم نصابی اور غیر نصابی سہولتیں بھی وسیع تعداد میں موجود ہیں۔ اس میں کھیلوں کی بین الاقوامی معیار کی سہولتیں جیسے ٹینس اور باسکٹ بال کورٹس، ہاکی، کرکٹ اور فٹ بال کے میدانوں کے ساتھ ساتھ ٹمپریٹر کنٹرولڈ سوئمنگ پولز شامل ہیں۔ ان سب کے علاوہ کنگسٹن کالج میں اِن ڈور اور آؤٹ ڈور جنگل جم، ایمفی تھیٹر، ماؤں کے لئے جمنازیم، گھڑ سواری اور میوزک روم بھی فراہم کئے گئے ہیں۔کنگسٹن کالج کا سیکیورٹی انفراسٹرکچر بھی تمام تر نقائص سے پاک ہے۔ ہنگامی صورتِ حال سے نمٹنے کے لئے آتشزدگی سے بچاؤ کا نظام بھی موجود ہے۔ کالج اپنے تمام طلبہ کو محتاط اور محفوظ ٹرانسپورٹ کی سہولت فراہم کرتا ہے۔ کنگسٹن کالج کا قیام مُلک کے سب سے جدید تعلیمی ادارے کے طور پر عمل میں لایا گیا ہے اور یہ دیگر جدید تعلیمی اداروں کے زمرے میں اپنی الگ اور منفرد شناخت کا حامل ہے۔کنگسٹن کالج کا افتتاح4مارچ2014ء کو لاہور میں ہوا، جس میں ٹیلی ویژن کی معروف شخصیات نادیہ حسین نے آنے والے معزز مہمانوں کا استقبال کیا اور نامور اداکارہ نادیہ جمیل نے تقریب کی میزبانی کے فرائض سرانجام دیئے۔

اس افتتاحی تقریب میں ڈاکٹر فیصل باری نے تعلیم کی اہمیت پر روشنی ڈالتے ہوئے پاکستان میں بین الاقوامی طور پر تسلیم شدہ تعلیم کی اہمیت پر زور دیا۔ڈاکٹر دانیا کورنیلیو قاضی نے کنگسٹن کالج کے اغراض و مقاصد واضح کئے، جبکہ عالیہ عالم نے حاضرین کو کالج میں موجود جدید سہولتیں سے آگاہ کیا۔ تقریب میں ایک پُرتکلف ڈنر کے بعد محفل موسیقی کا بھی اہتمام کیا گیا، جس میں مُلک کے نامور گلو کار راحت فتح علی خان نے اپنے فن کا جادو جگایا اور حاضرین کو رات گئے تک اپنے سازو آواز سے مسحور کئے رکھا۔کنگسٹن کالج نے والدین اور متوقع طلبہ کے لئے ایک ’’اوپن ڈے‘‘ کا بھی اہتمام کیا، جس میں والدین اور بچوں کے لئے دلچسپی کے یکساں مواقع موجود تھے۔ بچوں کے لئے میجک شو، گھڑ سواری، مِنی ٹرین اور جمپنگ کیسل جیسی مزیدار اور انٹرایکٹو سرگرمیوں کے علاوہ بچوں اور ان کے والدین کے لئے کئی دیگر گیمز اور مقابلے بھی منعقد کرائے گئے۔کنگسٹن کالج نے طلبہ کی سماجی، اخلاقی اور تعلیمی ترقی کے لئے تعلیم کا ایک نیا معیار قائم کیا ہے۔ یہ طلبہ میں آزادانہ اور تنقیدی سوچ پیدا کرنے کے لئے کوشاں ہے، جس سے انہیں مجاز اور فعال عالمی شہری بننے میں مدد ملے گی۔

مزید :

کالم -