خیبر پختونخوا پولیس غیر سیاسی، سندھ اور پنجاب میں اصلاحات کی ضرورت ہے: آئی جی مشتاق سکھیرا

خیبر پختونخوا پولیس غیر سیاسی، سندھ اور پنجاب میں اصلاحات کی ضرورت ہے: آئی جی ...

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) آئی جی پنجاب مشتاق سکھیرا نے کہا ہے کہ خیبرپختونخوا کی پولیس غیر سیاسی ہوگئی ہے۔ سندھ اور پنجاب میں پولیس اصلاحات کی ضرورت ہے، پنجاب پولیس کی بھرتیوں میں میرٹ اور قانون کی بالادستی کو مدنظر رکھا جارہا ہے۔ جماعۃ الدعوۃ فعال نہیں بلکہ ان کی ایک تنظیم فلاح انسایت فاؤنڈیشن فعال ہے۔نجی ٹی وی چینل کے پروگرام ’’جرگہ ‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے آئی جی پنجاب مشتاق سکھیرا نے کہا ہے کہ پنجاب میں امن و امان کی صورت حال بہتر بنانے میں پولیس کا کردار لائق تحسین ہے۔ وزیر اعلیٰ پنجاب نے مجھے تھانہ کلچر کی تبدیلی کے احکامات دئیے تھے جن میں پنجاب پولیس کافی حد تک کامیاب رہی ہے۔ انصاف کی فراہمی کیلئے پولیس نے بہترین انتظامات کئے ہیں اور ان میں مزید بہتری کی ضرورت ہے۔پولیس ہمیشہ سے ہی امیر لوگوں کو چھوڑ دیتی ہے جبکہ غریب آدمی کیخلاف کارروائی کرتی ہے ، جوکہ عوام میں اس کا مورال گرانے کا باعث بن رہا ہے۔میڈیا پولیس کی خامیوں پر شور مچاتا ہے لیکن پولیس کی مثبت سرگرمیوں کو نظر انداز کردیتا ہے۔مشتاق سکھیرا نے کالعدم تنظیموں کے خلاف کارروائی کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ جہادیوں کو یہ تنظیمیں اگر فلاحی کاموں میں لگا رہی ہیں تو یہ اچھی بات ہے۔جماعۃ الدعوۃ فعال نہیں،ان کی ایک تنظیم فلاح انسانیت فعال ہے اور وہ فلاحی سرگرمیاں کر رہے ہیں۔ لشکر جھنگوی کا پنجاب میں کوئی وجود نہیں ہے۔ 2سال سے سپاہ صحابہ کی تحریروتقریرمیں کافرکے نعروں کاسوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ سیکورٹی کے معاملات میں کافی حد تک بہتری آئی ہے، پنجاب پولیس نے اپنی بہترین صلاحیتوں کی وجہ سے دہشت گردوں کا سفایا کیا ہے۔ریٹائرڈمنٹ کے بعد کی زندگی کے بارے میں آئی جی پنجاب کا کہنا تھا کہ بیرون ملک اپنے بیٹے کے پاس جاؤں گا،کتابوں کا مطالعہ کروں گا،اگر مجھے ملک اور قوم کی خدمت کا موقع ملا تو ضرور کروں گا۔

مزید :

صفحہ آخر -