کوئی مائی کا لعل پاکستان کو نقصان نہیں پہنچا سکتا :عبد الغفور حیدری

کوئی مائی کا لعل پاکستان کو نقصان نہیں پہنچا سکتا :عبد الغفور حیدری

  

اسلام آباد (آئی این پی) ڈپٹی چیئرمین سینٹ مولانا عبدالغفور حیدری نے کہا ہے کوئی مائی کا لعل پاکستان کو نظریاتی و جغرافیائی طور پر نقصان پہنچا سکتا نہ ہی سیکولر ریاست بنا سکتا ہے، اب تو پاکستان بنانے کے دعویدار جماعتوں کے جلسوں میں پاکستان کا مطلب کیا لاالہ الااﷲ کا نعرہ لگنا بھی(بقیہ نمبر41صفحہ7پر )

بند ہوگیا ہے، مقتدر قوتوں کو پیغام دینا چاہتے ہیں وہ دینی طبقات کے ووٹوں کو چوری کرنا، انہیں دیوار سے لگانے اور ہرانے کیلئے مقدس جماعتوں کو پیسے دیکر اقتدار میں لانے کی کوشش نہ کریں، اس طرح وہ ملک و قوم کا نقصان کرسکتے ہیں، 7,8,9 اپریل کو اضا خیل نوشہرہ میں انسانی تاریخ کا سب سے بڑا اجتماع ہوگا۔ اتوار کو نیشنل پریس کلب میں متذکرہ اجتماع کے بارے میں میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے انکا کہنا تھا تین روزہ بین الاقوامی اجتماع پاکستان کی سیاست کا رخ موڑ دے گا‘ آنیوالا دور جمعیت علماء اسلام کا ہوگا۔ اس موقع پر جمعیت علماء اسلام کی 100سالہ خدمات پر مبنی دستاویزی فلم بھی دکھائی گئی۔ سینیٹر عبدالغفور حیدری کا مزید کہنا تھا امام کعبہ ایک بہت بڑے وفد کے ہمراہ 6اپریل کو پاکستان آئیں گے۔ اسی طرح بھارت ‘ بنگلہ دیش‘ عرب امارات‘ جنوبی افریقہ‘ نیپال سمیت 700کے قریب غیر ملکی مندوبین شریک ہونگے ، قیام پاکستان کے مقاصد ‘ آزادی کی جدوجہد کو اجتماع کے ذریعے اجاگر کیا جائے گا۔ملک کے تمام جید علماء کے متفقہ 22نکات آج بھی قومی بیانیہ کا درجہ رکھتے ہیں۔ یہی پاکستان کا بیانیہ ہے۔ پاکستان کا آئین اسلامی ہے، قرآن و سنت سے بالاتر کوئی قانون نہیں بن سکتا۔ کاش73ء کے آئین پر اسکی روح کے مطابق عملدرآمد ہوجاتا تو آج ملک کو جن مصیبتوں کا سامنا ہے ان سے دوچار نہ ہوتا۔ دہشت گردی و انتہا پسندی کا اسلام سے کوئی تعلق نہیں ، خون ناحق بہانہ خلاف اسلام ہے ، ہم سیاسی آئینی جدوجہد پر یقین رکھتے ہیں ،ہم داخلی ، خارجی قوتوں بھی پیغام دینا چاہتے ہیں پاکستان کے ایک ایک انچ کی حفاظت کی جائے گی ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -