مصالحتی مراکز میں کم وقت میں مقدمات کا نمٹایا جانا بڑی کامیابی ہے: چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ

مصالحتی مراکز میں کم وقت میں مقدمات کا نمٹایا جانا بڑی کامیابی ہے: چیف جسٹس ...

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)لاہورہائیکورٹ کے چیف جسٹس سید منصورعلی شاہ نے کہا ہے کہ مصالحتی مراکز میں ایک ماہ سے بھی کم عرصے میں 80مقدمات کو بات چیت کے ذریعے نمٹایا جانا عدلیہ کی بڑی کامیابی ہے، چھ اضلاع کی سیشن عدالتوں نے دو ماہ میں 1294 فوجداری مقدمات نمٹا کر نئی مثال قائم کی ہے۔چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ سید منصورعلی شاہ نے لاہورمیں مصالحتی سینٹرز کا دورہ کیا، بعد ازاں اپنے چیمبر میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئےانہوں نے کہا کہ بات چیت اورمصالحت کے ذریعے 100فیصد مقدمات نمٹایا جانا بڑی کامیابی ہے،مصالحتی سینٹرز کی بہتر کارکردگی کی وجہ سے انکا دائرہ تمام اضلاع تک بڑھایاجا رہا ہے۔انکا کہناتھاکہ لاہورمیں یہ دو مصالحتی سینٹرز 7مارچ کو قائم کیے گئے، ان مراکز کو 80مقدمات بھجوائے گئے جو تقریباً نمٹائے جا چکے ہیں،خاندانی،سول اور دیگر پرانے مقدمات کا ایک دن میں نمٹایا جانا فوری انصاف کی عمدہ مثال ہے۔چیف جسٹس کا کہناتھا کہ وکلاء اورسائلین کے بڑھتے ہوئے اعتماد کے پیش نظر مصالحتی سینٹرز کی تعداد دو سے بڑھا کر تین کر دی گئی ہے،چیف جسٹس نے کہا کہ چھ ماڈل اضلاع کی سیشن عدالتوں نے یکم فروری سے 31 مارچ تک 1294 فوجداری مقدمات نمٹائے جس کی عدالتی تاریخ میں نظیر نہیں ملتی۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -