نیپرا اور حکومتی گٹھ جوڑ کے خلاف دھرنا ہوگا، حافظ نعیم الرحمن

نیپرا اور حکومتی گٹھ جوڑ کے خلاف دھرنا ہوگا، حافظ نعیم الرحمن

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر ) جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن کی زیر صدارت ادارہ نور حق میں ذمہ داران کا ایک اہم اجلاس منعقد ہوا جس میں نائب امراء مظفر احمد ہاشمی،برجیس احمد،ڈاکٹر اسامہ رضی، ڈاکٹرواسع شاکر ،مسلم پرویز، سیکریٹری کراچی عبد الوہاب ،ڈپٹی سیکریٹریز سیف الدین ایڈوکیٹ،حافظ عبد الواحد شیخ ،انجینئر عبد العزیز ،سکریٹری اطلاعات زاہد عسکری، راجہ عارف سلطان ،ضلعی امراء عبد الرشید ، منعم ظفر خان ، عبد الجمیل ، قیمین اضلاع نعیم اختر ، محمود الحسن ، مرزافرحان بیگ اور محمد یوسف نے شرکت کی۔ اجلاس میں کے الیکٹرک ، نیپرا اور حکومتی گٹھ جوڑ کے خلاف 31مارچ کو ہونے والے جماعت اسلامی کے پر امن اورکامیاب احتجاجی دھرنے کے حوالے سے جماعت اسلامی کے کارکنان کو شیلنگ،فائرنگ ،گرفتاریوں ،لاٹھی چارج اور تشدد کے باوجود پر امن رہنے پر خراج تحسین پیش کیا گیا اور 7اپریل بروز جمعہ 12بجے دن کے الیکٹرک کے ہیڈ آفس کے سامنے احتجاجی دھرنے کی تیاریوں کے حوالے سے جائزہ لیا گیا ۔ حافظ نعیم الرحمن نے اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کو اس بات کی تحقیق کرنی چاہیئے کہ پر امن کارکنان پر لاٹھی چارج ، شیلنگ اور فائرنگ کرنے کا حکم کس نے دیا ۔انہوں نے کہا کہ کے الیکٹرک عوام کو لوٹنے والاادارہ ہے ۔ کراچی کے عوام پر مزید ظلم نہیں ہونے دیا جائے گا ۔ اٹھو آگے بڑھو کراچی ہمارا نعرہ ہے ۔ ہم کراچی کے عوام کے دکھ اور درد بانٹیں گے ۔کراچی کے شہری ہمارا ساتھ دیں ۔جماعت اسلامی عوا م کو مسائل سے نجات دلائی گی۔ انہوں نے کہا کہ تمام تر ریاستی جبرو تشدد اورحکومت اور پولیس کی کاروائیوں کے باوجود کراچی کے عوام کا مقدمہ لڑا ہے اور ثابت کیا ہے کہ اب عوام کو بے وقوف بنانے والوں کی دوکانیں نہیں چلیں گی ۔حافظ نعیم الرحمن نے کارکنان کو ہدایت کی کہ کارکنان بھرپور رابطہ عوام مہم شروع کریں ،کراچی کے تمام اضلاع و زونز کی سطح پر کے الیکٹرک کمپلنٹ سیل کیمپ قائم کیے جائیں اور عوام کی جانب سے کے الیکٹرک کے خلاف شکایا ت جمع کی جائیں اور جمعہ کو مرکزی دھرنے میں اپنے ساتھ لے کر آئیں اور اس دھرنے کو بھر پور طریقے سے کامیا ب بنائیں ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -