نہرو اور جادیو یونیورسٹی کے بعد کلکتہ میں بھی کشمیر، منی پور , ناگالینڈکی آزادی کے نعرے بلند ہوگئے

نہرو اور جادیو یونیورسٹی کے بعد کلکتہ میں بھی کشمیر، منی پور , ناگالینڈکی ...
نہرو اور جادیو یونیورسٹی کے بعد کلکتہ میں بھی کشمیر، منی پور , ناگالینڈکی آزادی کے نعرے بلند ہوگئے

  

کلکتہ (ڈیلی پاکستان آن لائن)جواہر لعل یونیورسٹی اور جادیو یونیورسٹی کے بعد اب کولکتہ کی اکیڈمی آف فائن آف آرٹس میں آزادی کے نعرے لگ گئے۔ طلبہ نے آر ایس ایس کے بنگلا دیش میں ہندوؤں پر مبینہ حملوں پر بحث کرنے کے لئے سمینار کی مخالفت میں کشمیر، منی پور اور ناگالینڈ کی آزادی کے حق میں نعرے لگا دیے۔ طلبہ نے اترپردیش کے وزیر اعلیٰ یوگی کے خلاف بھی بینرز بلند کر دئیے.

عمران خان کو پڑوسی ملک کے شہریوں اور یو ایس جسٹس ڈیپارٹمنٹ نے فنڈنگ کی ، اب رنگے ہاتھوں پکڑے جانے پر واویلا کر رہے ہیں: دانیا ل عزیز

ایشین نیو ز انٹرنیشنل(اے این آئی) کے مطابق بھارتی ہندو انتہاء پسند تنظیم آر ایس ایس کے سیمینار کی مخالفت میں کلکتہ کی اکیڈمی آف فائن آف آرٹس میں کشمیر کی آزادی کے نعرے لگ گئے۔ یہ واقعہ سوشل میڈیا پر اپ لوڈ ایک ویڈیو میں سامنے آیا۔ ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک طالبعلم زور وشور سے کشمیر، ناگالینڈ اور منی پور جیسی مقبوضہ ریاستوں کی آزادی کے حق میں فلک شگاف نعرے بلند کر رہا ہے جبکہ اس کے اردگرد کھڑے دیگر طلبہ نے بینرز اٹھا رکھے ہیں اور وہ بھی اس کا ساتھ دیتے ہوئے نعرے بلند کر رہے ہیں۔

’جب بھی اسے مجھ پر پیار آتاہے تو کہتی ہے پائے کھلاؤ‘

اے این آئی کے مطابق طلبہ نے اترپردیش کے وزیر اعلیٰ یوگی کے خلاف بھی بینرز اٹھا رکھے تھے۔ آر ایس ایس نے بنگلا دیش میں ہندوؤں پر مبینہ حملوں پر بحث کرنے کے لئے سمینار کا انعقاد کیا تھا۔

مزید :

بین الاقوامی -