’میرے بیٹے کی موت ہوگئی اور اس کی وجہ یہ تھی کہ۔۔۔‘ خاتون نے فیس بک پر ایسی بات لکھ دی کہ عدالت نے 5 کروڑ روپے جرمانہ کردیا، ایسا کیا لکھا تھا؟ آئندہ آپ بھی کچھ بھی پوسٹ کرنے سے پہلے بار بار سوچیں گے

’میرے بیٹے کی موت ہوگئی اور اس کی وجہ یہ تھی کہ۔۔۔‘ خاتون نے فیس بک پر ایسی ...
’میرے بیٹے کی موت ہوگئی اور اس کی وجہ یہ تھی کہ۔۔۔‘ خاتون نے فیس بک پر ایسی بات لکھ دی کہ عدالت نے 5 کروڑ روپے جرمانہ کردیا، ایسا کیا لکھا تھا؟ آئندہ آپ بھی کچھ بھی پوسٹ کرنے سے پہلے بار بار سوچیں گے

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) ہمارے ہاں سوشل میڈیا پر الزام تراشی کا ایک بازار گرم ہے مگر اس پر کوئی گرفت میں نہیں آ رہا لیکن امریکہ میں ایک لڑکی نے فیس بک کے ذریعے اپنے دوست پر ایک الزام عائد کیا اوراسے ایسی سزا مل گئی کہ ہمارے سوشل میڈیا کے افلاطونوں کے لیے مقام عبرت ہے۔ ٹیلیگراف کی رپورٹ کے مطابق جیکولین ہیمنڈ نامی لڑکی نے فیس بک پراپنے ایک دوست پر الزام عائد کرتے ہوئے لکھا کہ اس نے شراب کے نشے میں دھت ہو کر میرے بیٹے کو قتل کر دیا ہے۔ اس کے جواب میں اس کے ڈیوائن ڈیال نامی دوست سے اس کے خلاف ہرجانے کا مقدمہ دائر کر دیا۔ جس کا فیصلہ سناتے ہوئے عدالت نے جیکولین کو 5لاکھ ڈالر(تقریباً5کروڑ روپے) ہرجانہ ادا کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

پی ٹی آئی نے فارن فنڈنگ اور عمران خان پر توہین عدالت کے کیس میں الیکشن کمیشن کا دائرہ اختیار چیلنج کردیا

عدالت میں ڈیال نے کہا کہ ”جیکولین کے بیٹے کی موت کے ساتھ میرا کچھ لینا دینا نہیں۔ اس نے مجھ پر الزام عائد کرکے مجھے بدنام کرنے کی کوشش کی اورمجھے شدید ذہنی کوفت سے دوچار ہونا پڑا، لہٰذا اسے ہرجانہ ادا کرنے کا حکم دیا جائے ۔“ امریکی ریاست نارتھ کیرولینا کی وکیل میسی اووین کا کہنا تھا کہ ”آج کل لوگ الفاظ کی اہمیت کو نہیں سمجھتے اور سوشل میڈیا پر وہ کچھ بھی کہہ دیتے ہیں جو انہیں نہیں کہنا چاہیے۔لوگوں کو ذہن میں رکھنا چاہیے کہ وہ اپنے ان الفاظ کی بدولت کسی بھی وقت مشکل میں پھنس سکتے ہیں، خاص طور پر جب وہ دوسروں پر الزام تراشی کر رہے ہوں۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -