ہم جیسے غریبوں کو بھی پاناما سے کچھ مل جائے تو کون سا آسمان گر جائے گا: اسلم رئیسانی

ہم جیسے غریبوں کو بھی پاناما سے کچھ مل جائے تو کون سا آسمان گر جائے گا: اسلم ...
ہم جیسے غریبوں کو بھی پاناما سے کچھ مل جائے تو کون سا آسمان گر جائے گا: اسلم رئیسانی

  

کوئٹہ (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق وزیر اعلیٰ بلوچستان نواب اسلم رئیسانی نے کہا ہے کہ ہر طرف پاناما کا ہنگامہ جاری ہے، اس کو چھوڑ دینا چاہیے، اگر ہم جیسے غریبوں کو بھی اس سے کچھ مل جائے تو کون سا آسمان گر جائے گا۔

بیرون ملک سے واپسی پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے نواب اسلم رئیسانی کا کہنا تھا کہ اگر آپ بیماری کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کریں گے تو پھر وہ آپ کو تھپڑ مارے گی ، سگریٹ نہ پئیں اور نسوار نہ کھائیں۔

پی ٹی آئی نے فارن فنڈنگ اور عمران خان پر توہین عدالت کے کیس میں الیکشن کمیشن کا دائرہ اختیار چیلنج کردیا

انہوں نے پاناما لیکس پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کوئی کہتا ہے پاناما گیٹ اور کوئی کہتا ہے پاناما لیک، اگر یہ پاناما سمندر کے اندر لیک ہو جائے تو بحری جہازوں کو جنوبی امریکہ سے گھوم کر آنا پڑے گا۔ کیونکہ سمندر میں پانی ہی نہیں ہوگا تو بہتر یہ ہے کہ اگر ہم غریبوں کو بھی اس بٹوارے میں کچھ مل جائے تو کون سا آسمان گرجائے گا۔

نواب اسلم رئیسانی نے چھوٹے موٹے جھوٹ کو جائز قرار دیتے ہوئے میڈیا نمائندگان کو نصیحت کی کہ’ خطرناک جھوٹ مت بولیں بلکہ جس طرح میں چھوٹا موٹا جھوٹ بولتا ہوں اسی طرح آپ لوگ بھی بول لیں‘۔

انہوں نے واضح کیا کہ وہ بھاگنے والے نہیں ہیں بلکہ اپنا علاج کرانے بیرون ملک گئے تھے اور اب واپس آگئے ہیں۔

مزید :

کوئٹہ -