قندوز مدرسے پر بمباری کھلی دہشت گردی ،یو این او خاموش تماشائی کا کردار ادا کرنے کی بجائے فوری نوٹس لے:مولانا فضل الرحمن

قندوز مدرسے پر بمباری کھلی دہشت گردی ،یو این او خاموش تماشائی کا کردار ادا ...
قندوز مدرسے پر بمباری کھلی دہشت گردی ،یو این او خاموش تماشائی کا کردار ادا کرنے کی بجائے فوری نوٹس لے:مولانا فضل الرحمن

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)جمعیت علماء اسلام (ف) کے سر براہ مولانا فضل الرحمن نے افغان صوبہ قندوز میں ایک دینی مدرسے کی تقریب دستار بندی پر امریکہ کی وحشانہ بمباری کی شدید الفاظ میں مذمت کی اور اس کو  کھلی دہشت گردی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ سراسر ظلم اور بر بریت ہے،یو این او کو خاموش  تماشائی کا کردار ادا کر نے کی بجائے ان واقعات کو نوٹس لینا چاہیے ۔

تفصیلات کے مطابق  جمعیت علماء اسلام (ف) کے سر براہ مولانا فضل الرحمن نے کہاکہ قندوز میں مدرسے پر بمباری اسلام اور مسلم دشمنی کا واضح ثبوت ہے،علم حاصل کر نے والے معصوم بچوں کوبمباری کا نشانہ بنانا دنیا کے سامنے واضح کر دیا ہے کہ امریکہ انسانیت اور مسلم دشمنی پر اتر آیا ہے ،ے گناہ مسلمانوں کے خون کے ساتھ ہولی کھیلی جارہی ہے، عالمی دنیا کو اس بات کا ایکشن لینا چاہیے۔مولانا فضل الرحمن نے کہاکہ جے یو آئی نے ہمیشہ ظلم کی مخالفت کی اور مذمت کی جبکہ آج بھی اس بدترین سانحہ کی شدید مذمت کرتی ہے ،اس واقعہ میں بے گناہ اور  معصوم بچے جو امریکہ کی بربریت نشانہ بنے ہیں اس نے پوری دنیا کے مسلمانوں کے دلوں کوہلاکر رکھ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ انسانی حقوق کے پرخچے اڑانے کے مترادف ہے ، انسانی حقوق کے ٹھیکداروں کو اب علم حاصل کر نے والے معصوم بچوں کے گوشت کے پرخچے اڑتے ہوئے نظر نہیں آتے ؟انسانی حقوق کی تنظیمیں اب کہاں گم ہوگئی ہیں ؟۔مولانا فضل الرحمن نے کہاکہ جے یو آئی جمعہ 6اپریل کو کشمیر میں بھارتی اور فلسطین میں اسرائیلی مظالم اور قندوز  مدرسے پر امریکی دہشتگردی کے خلاف ملک گیر یوم احتجاج منائے گی،مساجد میں قرار دادیں منظور کی جائیں اور ہر شہر میں احتجاجی مظاہرے کئے جائیں گے۔ انہوں نے کارکنوں اور عوام سے اپیل ہے ان واقعات پر بھر پور احتجاج کریں۔

مزید :

قومی -