ٹیکس ریفنڈ کی جلد ادائیگیوں کا معاملہ کابینہ میں پیش کرنیکا فیصلہ

ٹیکس ریفنڈ کی جلد ادائیگیوں کا معاملہ کابینہ میں پیش کرنیکا فیصلہ

  

اسلام آبا د(آئی این پی)کابینہ کمیٹی برائے توانائی نے ٹیکس ریفنڈ کی جلد از جلد ادائیگی کا معاملہ کابینہ کے سامنے پیش کرنے کا فیصلہ کرلیا جب کہ ایل این جی ٹرمینل کمپنیوں سے مذاکرات کے حوالے سے سمری پر مزید غور کرنے کیلئے ایک ذیلی کمیٹی بھی قائم کر دی گئی۔ جمعرات کو وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر کی زیر صدارت کابینہ کمیٹی برائے توانائی کا اجلاس اسلام آباد میں منعقد ہوا۔پیٹرولیم ڈویژن کی ایل این جی ٹرمینل کمپنیوں سے مذاکرات کے حوالے سے ایک سمری پر کابینہ کمیٹی نے معاملے پر مزید غور کرنے کیلئے ایک ذیلی کمیٹی قائم کر دی، جو کابینہ کمیٹی برائے توانائی کو ایک ہفتے تک رپورٹ کرے گی ۔پیٹرولیم ڈویژن نے کمیٹی کو پاکستان ایل این جی ٹرمینل لمیٹڈ اور پاکستان گیس پورٹ کنسورشیم لمیٹڈ کے مابین مسئلے پر بھی بریف کیا۔پاور ڈویژن نے کمیٹی کو ملک میں بجلی کی قیمتوں میں کمی کے حوالے سے ممکنہ اقدامات پر بریفنگ دی. حکومتی پاور پلانٹس کے کیپیسٹی چارجز کو منطقی بنانے ، مختلف پاور پلانٹس کے قرضوں کا دورانیہ بڑھانے کے ممکنات اور فیول کی قیمت میں بہتری کے حوالے سے مختلف تجاویز کا جائزہ لیا گیا۔کابینہ کمیٹی کے ممبران، وفاقی وزیر برائے توانائی عمر ایوب، وفاقی وزیر برائے ریلوے شیخ رشید، وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی، معاون خصوصی برائے پیٹرولیم ندیم بابر،پاور ڈویژن اور نیپرا کے اعلی حکام نے شرکت کی۔

ٹیکس ریفنڈ

مزید :

علاقائی -