شجا ع آباد‘ آٹا ذخیر اندوزں کے حوالے‘ شہری فاقوں پر مجبور

  شجا ع آباد‘ آٹا ذخیر اندوزں کے حوالے‘ شہری فاقوں پر مجبور

  

شجاع آباد (نمائندہ خصوصی) شجاع آباد میں آٹے کا بحران جاری انتظامیہ حرکت میں نہ آئی آٹا ذخیروں اندزوں کے حوالے ذرائع سے معلوم ہوا ہے شجاع آباد میں آٹا بلیک میں فروخت ہونے کا انکشاف ہو اہے اسسٹنٹ کمشنراور ریونیو افسران نے چشم پوشی اختیار کی ہوئی ہے ذرائع نے بتایا کہ انتظامیہ نے سرکاری آٹے کو ذخیرہ اندوزوں کو فروخت کر رہی ہے جس کی وجہ سے کوئی چیک اینڈ بیلنس نہیں ہے آج بھی آٹا لینے والوں کی لمبی قطاریں لگی رہیں اور(بقیہ نمبر39صفحہ6پر)

مزدوردیہاڑی دار لوگ صبح دس بجے کے سیل پوائنٹس پر آٹے کے حصول کیلئے بیٹھے رہے فلور ملز کی جانب سے آٹا تقریبا دو بجے دن پہنچا جس سے عوام آٹے کے حصول کیلئے سارا دن لائنوں میں لگے خوار ہوتے رہے فلور ملز مالکان شہر سے دور جا کر آٹے کی ٹرالی کھڑی کردیتے ہیں اور بذریعہ فون اطلاع کر دیتے ہیں اور سیل پوائنٹس والے بیشتر افراد چنگ چی رکشہ پر آٹا لوڈ کر ا کر آٹا غائب کر کے چند دس کلو والے تھیلے سیل پوائنٹ پر لے جاتے ہیں جو جاتے ہی سیل پوائنٹ پر ختم ہو جاتے ہیں اس ضمن میں اسسٹنٹ کمشنر شجاع آباد مبین احسن نے ریونیو سٹاف پٹواریوں کی سیل پوائنٹ پر ڈیوٹی لگائی ہوئی ہے جہاں پر نہ تو کوئی فوڈ ڈیپارٹمنٹ کا نمائندہ ہوتا ہے اور نہ ہی ریونیو کا عملہ موجود ہوتا ہے جس سے سیل پوائنٹ والے اور فوڈ ڈیپارٹمنٹ اپنی من مانی کر رہے ہیں شہریوں نے وزیراعلیٰ پنجاب، کمشنر ملتان،ڈی سی ملتان سے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر اس کا نوٹس لے کر شہریوں کو آٹا مہیا کرایا جائے۔

آٹا بحران

مزید :

ملتان صفحہ آخر -