افغانستان سے دراندازی اور حملوں کو روکا جائے ، جنرل کیانی کا جنرل ایلن سے مطالبہ

افغانستان سے دراندازی اور حملوں کو روکا جائے ، جنرل کیانی کا جنرل ایلن سے ...

راولپنڈی(آن لائن+ثناءنیوز+جی این آئی) افغانستان میں اتحادی فوج کے سربراہ جنرل جان ایلن نے راول پنڈی میں آرمی چیف جنرل اشفاق پرویز کیانی سے ملاقات کی جس میں دو طرفہ امور پر تبادلہ خیال کے علاوہ علاقائی سلامتی ، افغانستان کی صورت حال ، سرحد پار سے افغان دہشت گردوں کے حملوں سمیت دیگر اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا جبکہ آرمی چیف اشفاق پرویز کیانی نے ایساف پر زور دیا کہ پاکستان اور امریکہ کے درمیان دوطرفہ تعلقات باہمی اعتماد اور احترام پر مبنی ہونے چاہئیں جبکہ انہوں نے ایساف کمانڈر پر بھی زور دیا کہ سرحد پار سے پاکستانی علاقے میں دراندازی اور سکیورٹی فورسز پر حملوں کو روکنے کے لئے موثر اقدامات اٹھائے جائیں ۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق ایساف کے کمانڈر ایک روزہ دورے پر آئے تھے جہاں انہوں نے اپنی آمد کے فوراً بعد جی ایچ کیو ، راولپنڈی گئے جہاں جنرل اشفاق پرویز کیانی سے ملاقات کی ، اس ملاقات میں دہشت گردی کے خلاف جنگ میں تعاون، پاک افغان سرحدی امور علاقائی سلامتی سمیت باہمی دلچسپی کے دیگر موضوعات پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ملاقات میںپاکستان ، افغانستان اور ایساف کی عسکری قیادت پر مشتمل سہ فریقی کمیشن کے اجلاس میں کئے گئے فیصلوں پر عملدرآمد کا بھی جائزہ لیا گیا جبکہ پاکستان کی جانب سے سرحد پار دراندازی اور سکیورٹی فورسز پر حملوں کا معاملہ اٹھایا گیا اور ایساف کمانڈر پر زور دیا گیا کہ ان حملوں کو روکنے کیلئے موثر اقدامات کئے جائیں۔ملاقات میں اس بات پر اتفاق کیا گیا کہ تینوں فریقین پاکستان امریکہ اور افغانستان کو باہمی مفادات کے تحفظ کے لئے مشترکہ اقدامات اٹھانا چاہیں اور دہشت گردی کے خاتمے کے لئے مشترکہ کوششیں بھی کی جائیں جو پاکستان اور افغانستان اور علاقائی امن استحکام کے لئے خطرہ ہیں ۔ ملاقات میں اس بات کا بھی اعادہ کیا گیا کہ سرحدی علاقوں میں تعینات پاکستانی اور افغان فوجیوں کے تحفظ کے لئے ذمہ داریوں کا احساس کیا جائے ۔جبکہ ملاقات میںجنرل اشفاق پرویز کیانی نے کہا کہ وہ امریکہ کے ساتھ باہمی اعتماد اور احترام پر مبنی تعلقات چاہتے ہیں اور حالیہ ملاقات نیٹو فورسز اور پاک فوج کے درمیان سٹرٹیجک اور پیشہ وارانہ تعلقات کو مزید بہتر بنانے میں مدد گار ثابت ہوگی ۔اس موقع پر جنرل ایلن کا کہنا تھا کہ وہ خطے میں امن واستحکام اور بالخصوص افغانستان میں امن کے قیام کے لئے پاکستان کا کردار انتہائی اہمیت کا حامل ہے ان کی کوشش ہے کہ ایساف اور پاک فوج کے درمیان سٹرٹیجک تعاون کو مزید فروغ حاصل ہو ۔

مزید : صفحہ اول