بیر کی شاخ ترا شی بہترین پیداوار کی ضامن ہے‘ما ہر ین زراعت

بیر کی شاخ ترا شی بہترین پیداوار کی ضامن ہے‘ما ہر ین زراعت

سرگودھا (اے پی پی) ما ہر ین زراعت کے مطا بق بیر کی شاخ ترا شی اچھی پیداوار کی ضمانت ہے ، بیر کی کا شت میں شاخ تراشی ا یک ا یسا عمل ہے جس کاپھل کی کوا لٹی اورپیداوار پر بہت گہرااثرپڑ تا ہے ، با غبان ا پنی لا علمی اورلاپرواہی کی و جہ سے شاخ تر اشی کو ا ہمیت نہیںد یتے ۔شاخ تراشی کا عمل مناسب نبا تاتی بڑھو تری نئے شگو فوں کے نکلنے اور درخت مناسب پھیلا ﺅ کی ضما نت ہے ۔شاخ ترا شی سے پودوںکا پھیلا ﺅ اور قد مناسب رکھ کر ا یک ایکڑمیں زیا د ہ پو د ے لگا کر پیداوار بڑھائی جا سکتی ہے ۔شاخ تراشی سے پودوں کی او نچا ئی مناسب حدتک ر کھ کر کیڑوںاوربیماریوں سے محفوظ رکھنے کیلئے سپرے کر نااور پھل بر د اشت کر نا آسان ہے جس سے اخرا جات میںخاطرخوا ہ کمی ہوتی ہے۔ شاخ تر اشی سے پو د ے کے ا ند رو نی حصہ کو مناسب رو شنی ملنے کی و جہ سے ا س حصے میںپتے اورپھو ل نکلتے ہیںجس کے نتیجہ میں اس حصے میںپھل بنتا ہے ۔شاخ تراشی میں استعما ل ہو نے وا لے اوزار اچھی طرح سے تیز ہو نے چا ہیے ۔

بیمار شدہ پو د ے کی شاخیں کا ٹنے کے بعد اوزاروں کو پھپھوندی کش ز ہر سے صا ف کرنے کے بعد صحت مند پو دوںکی شاخ تراشی کریں تاکہ بیماری کے جراثیم صحت مندپو دوںپراثرانداز نہ ہو ں بیر کا پھل ہمیشہ نئے شگو فوں پر نکلتا ہے۔لہذا نئے شگو فے بڑھانے کیلئے سا لا نہ شا خ ترا شی کی ضرورت ہے ۔ا چھی پیداوار لینے کیلئے تقر یبا 50شاخیں کا ٹی جا ئیں تاکہ پو د ے کے ہر حصے میں روشنی پڑنے سے نئے شگو فے نکل سکیں اور نئے شگو فوںپر پھول اور پھل بن سکیں۔

مزید : کامرس