عید الفطر،شہریوں کی جانب سے خریداری کے 5سالہ ریکارڈ ٹوٹ گئے

عید الفطر،شہریوں کی جانب سے خریداری کے 5سالہ ریکارڈ ٹوٹ گئے
عید الفطر،شہریوں کی جانب سے خریداری کے 5سالہ ریکارڈ ٹوٹ گئے

  


کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک )آل کراچی تاجر اتحاد کے چیئرمین عتیق میر نے بتایا ہے کہ اس سال عید پر شہریوں کی جانب سے خریداری میں بے حد اضافہ دیکھنے میں آیا اور عید پر سیل کے گزشتہ پانچ سال کے ریکارڈ ٹوٹ گئے ۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عتیق میر نے ماہ رمضان اور عید پر سیکیورٹی اداروں کی کارکردگی کو قابلِ قدر اور لائق ستائش قرار دیتے ہوئے پولیس، رینجرز اور انتظامیہ کے تمام اداروں کو خراجِ تحسین پیش کیا ہے۔انھوں نے کہا کہ گزشتہ 5سال کے مقابلے میں رواں سال رمضان المبارک میں ٹارگٹ کلنگ، ڈکیتی اور لوٹ مار کے واقعات میں حوصلہ افزا کمی دیکھنے میں آئی جس کا تمام تر سہرا سیکیورٹی اداروں کے سر ہے۔ انھوں نے کہا کہ بدامنی کے واقعات کی روک تھام کے نتیجے میں کراچی کے عوام کو عرصے بعد خوف کے ماحول سے باہر نکلنے کا موقع ملا اور عوام کا ہجوم رمضان المبارک کے پہلے عشرے میں ہی مارکیٹوں میں امڈ آیا جس سے عید کے روایتی جوش و خروش، جذبے اور چہل پہل نے عروس البلاد کراچی کی رونقیں لوٹادیں۔انھوں نے عید اور رمضان المبارک پر امن و امان کی صورتحال کو تجارتی اور کاروباری لحاظ سے خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا کہ رواں سال عید سیل نے گزشتہ 5 سال کا ریکارڈ توڑ دیا، تاجروں نے عید پر فروخت کے لیے 80 ارب روپے سے زائد سرمایہ کاری کی جبکہ مہنگائی کے باوجود عوام کی جانب سے 50 ارب روپے سے زائد خریداری کی گئی، ریڈی میڈ گارمنٹس اور جوتوں کی بیشتر دکانوں پر اسٹاک ختم ہوگیا، لان کے تیار سوٹوں کی طلب میں بیحد اضافہ ہوا، کپڑا ملوں کو آرڈر بھگتانا مشکل ہوگیا، بچوں کے لیے کی جانے والی خریداری سر فہرست رہی، خواتین دوسرے اور مرد تیسرے نمبر پر رہے، سلے سلائے کپڑوں کی خریداری کا رحجان بڑھ گیا، ریڈی میڈ اور کڑھائی دار کپڑے 90فیصد خریداروں کی توجہ کا مرکز رہے۔انھوں نے کہا کہ یہ بات واضح ہوگئی کہ پرامن کراچی ملک کی خوشحالی اور معاشی ترقی کا ضامن ہے جسے مستقبل میں بھی مستقل بنیادوں پر قائم رکھنا حکومت اور حکومتی اداروں کی اولین ذمے داری ہے۔

مزید : بزنس


loading...