بہنوئی کا تشدد ، قومی کرکٹر نداراشد ڈار کا وزیر اعلی سے سیکیورٹی کا مطالبہ

بہنوئی کا تشدد ، قومی کرکٹر نداراشد ڈار کا وزیر اعلی سے سیکیورٹی کا مطالبہ

                                          گوجرانوالہ(بےورورپورٹ)تنسیخ نکاح کا مقدمہ دائر کر نے کی رنجش پر شوہر کا 3مسلح ساتھےوں کے ہمراہ سسرالیوں کے گھر دھاوا بےوی سمیت قومی کرکٹ ٹیم کی کھلاڑی سالی پر بدترین تشدد ، پانچ روز گزر جانے کے کے باوجود تھا نہ جناح روڈ پولیس کی طرف سے بااثر ملزمان گرفتار نہ کر نے پر کرکٹر خاتون کا سی پی او اور ایس پی سول لائن کے دفتر جا کر شدید احتجاج ،ملزمان کو جلد گرفتار کر نے کا مطالبہ ۔تفصیل کے مطابق ڈیلٹا روڈ کی رہائشی قومی کرکٹ ٹےم کی خاتون آل راو¿نڈر کھلاڑی ندا راشد ڈار کی حقیقی بہن صوفیہ ڈار کی شادی عرصہ 3سالہ قبل نواحی علاقہ بھکی سندھواں کے رہائشی جنےد اعجاز سندھو کے ساتھ ہوئی اور ان کے ہاں دو بچے پیدا ہوئے گھریلو ناچاقی کے باعث صوفیہ پچھلے پانچ ماہ سے اپنے میکے آکر رہنے لگی اور اسی دوران اس نے تنسےخ نکاح کا دعویٰ دائر کیا ملزم جنید اعجاز سندھو اکثر اسے دھمکیاں دیتا اور مقدمہ واپس لینے کو کہتا مگر وہ انکار کر دیتی اسی رنجش پر ملزم جنید نے اپنے 3مسلح ساتھیوں کے ہمراہ سسرالیوں کے گھر ہلہ بول دیا اور آتے ہی اسلحہ کے بٹ مار کر بےوی صوفیہ پر تشدد شروع کر دیا بہن کو بچانے کے لیے آنے والی نداراشد ڈار نے مداخلت کی تو ملزمان نے اس کو بھی بدترین تشدد کا نشانہ بناےا اور مبینہ طور پر اسے برہنہ کر کے اسلحہ لہراتے ہوئے دھمکیاں دیتے ہوئے فرار ہو گئے اس کا جناح روڈ پولیس نے کرکٹرندا راشد ڈار کی مدعیت میں مقدمہ نمبری 319/14تو درج کر لیا مگر آج پانچ روز گزر جانے پر ملزمان گرفتار نہ کیے جاسکے جس پر شدید احتجاج کر تے ہوئے کرکٹر نداراشد ڈار نے سی پی اور اور ایس پی سول لائن کے دفتر میں جا کر احتجاج کیا اور ملزمان کو گرفتار کر کے تحفظ جان و مال فراہم کر نے کا مطالبہ کیا پولیس افسران نے ملزمان جلد گرفتار کر نے کی یقین دہانی کروا دی ہے یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ ملزم مذکورہ نے 10جون 2014کو بھی سسرالیوں کے گھر پر حملہ آور ہو کر بےوی اور دیگر اہل خانہ پر تشدد کیا تھا جس کا مقدمہ صوفیہ ملزم کی بےوی کی مدعےت میں درج ہے اور اب ملزم کے خلاف اس کی حقیقی بہن ندا راشد ڈار نے مقدمہ درج کروا دیا ہے ۔قومی کرکٹر ندا راشد ڈار نے کہا ہے کہ وہ ان دنوں شدید عدم تحفظ کا شکار ہے اور اپنے اہل خانہ سمیت گھر میں بند ہو کر رہ گئی ہیںبااثر ملزمان انہیں سنگےن نتائج ،قتل ،اغواءجیسی دھمکیاں دے رہے ہیں وہ شدید عدم تحفظ کا شکار ہیں اور پریکٹس تک کر نے سے قاصر ہیں وہ گوجرانوالہ میں میڈیا سے گفتگو کر رہی تھیں انہوں نے وزیر اعلیٰ ،آئی جی پنجاب اور سی پی او گوجرانوالہ سے جان و مال کا تحفظ فراہم کر نے اور سکیورٹی فراہم کرنے کا مطالبہ کر دیا۔

نداراشد ڈار

مزید : صفحہ آخر