وکیل ہر فیس بک صارف کو 67ہزار روپے دلانے میں سرگرم

وکیل ہر فیس بک صارف کو 67ہزار روپے دلانے میں سرگرم
وکیل ہر فیس بک صارف کو 67ہزار روپے دلانے میں سرگرم

  


فرینکفرٹ (بیورونیوز ) آسٹریا میں قانون کے ایک طالب علم نے ”ڈیٹا پروٹیکشن“ قوانین کی خلاف ورزی کے الزام میں فیس بک کے خلاف دعوی دائر کر دیا۔ میکس شریمز نے فیس بک کے اربوں صارفین سے اپیل کی ہے کہ وہ بھی اس دعوی میں حصہ دار بنیں، اس مقصد کے حصول کے لئے میکس نے ایک ویب ایڈریس بھی دیا ہے، جہاں لاگ اِن ہو کر دعوی میں شرکت کی جا سکتی ہے۔ میکس شریمز نے فیس بک کے خلاف پہلے بھی یورپین کورٹ آف جسٹس میں مقدمہ دائر کر رکھا ہے، تاہم اب کی بار اس نے ویانا کی کمرشل عدالت میں دعوی دائر کیا ہے۔ میکس نے ڈیٹا قوانین کی خلاف ورزی پر فیس بک کے خلاف فی صارف 5 سو یورو(670ڈالر) کا دعوی دائر کیا ہے، جس میں امریکی نیشنل سکیورٹی ایجنسی کو بھی شامل کیا گیا ہے۔ اس ضمن میں 26 سالہ میکس شریمز کا کہنا ہے کہ ”ہمارا مقصد ڈیٹا کی مکمل حفاظت کے ساتھ فیس بک کا قانون کے مطابق استعمال یقینی بنانا ہے“۔ ڈیٹا پروٹیکشن کی خلاف ورزی کے الزامات کے باعث ان دنوں فیس بک بہت زیادہ دبا? میں ہے۔ فیس بک اس دعوی پر موقف دینے سے بھی انکاری ہے۔ واضح رہے کہ فیس بک کے صارفین کی تعداد 1.32ارب تک پہنچ چکی ہے۔ حال ہی میں فیس بک نے آمدن میں 61فیصد اضافہ کا اعلان کیا ہے، جس میں بڑا حصہ موبائل فون کے اشتہارات نے ڈالا ہے، جو 2سو ارب ڈالر بنتا ہے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...