آئی ایم ایف کو نجکاری تیز اورایک لاکھ افراد ٹیکس نیٹ میں شامل کرنے کی یقین دہانی

آئی ایم ایف کو نجکاری تیز اورایک لاکھ افراد ٹیکس نیٹ میں شامل کرنے کی یقین ...

 اسلام آباد (آن لائن) پاکستان نے آئی ایم ایف کو نجکاری کے عمل کو تیز کرنے اور 2016 تک ایک لاکھ افراد کو ٹیکس نیٹ میں شامل کرنے کی یقین دہانی کرا دی ہے ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستان او ر آئی ایم ایف کے دبئی میں شروع ہونے والے مذاکرات میں آئی ایم ایف نے پاکستان میں توانائی کے شعبے میں اصلاحات اور نجکاری کو عمل میں سستی کے معاملے پر تحفظات کا اظہار کیا ہے آئی ایم ایف نے پی آئی اے اور سٹیل ملز کی نجکاری ترجیحی بنیادوں پر کرنے کا کہا ہے اور آئی ایم ایف نے توانائی کے شعبے میں اصلاحات کرنے اور بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کو نجی شعبے کے حوالے کرنے کے لئے حکومت کو شرائط پیش کی ہیں ۔آئی ایم ایف نے گردشی قرضوں میں مسلسل اضافہ پر بھی پاکستان سے تشویش کا اظہار کیا ہے ۔ واضح رہے کہ رواں سال گردشی قرضوں کا حجم 615 ارب روپے سے تجاوز کر چکا ہے جس پر آئی ایم ایف حکام نے تشویش کا اظہار کیا ہے پاکستان نے 2016 تک ایک لاکھ مزید افراد کو ٹیکس نیٹ میں لانے کی یقین دہانی کرائی ہے وزیر خزانہ اسحاق ڈار آئی ایم ایف سے دبئی میں جاری مذاکرات میں شمولیت کے لئے کل دبئی روانہ ہوں گے واضح رہے کہ آئی ایم ایف اور حکومت پاکستان کے مذاکرات کامیاب ہوئے تو پاکستان کو آئی ایم ایف کی طرف سے 51 کروڑ ڈالر کی نویں قسط جاری کی جائے گی ۔

مزید : کامرس