کابل ،ڈرون حملہ ،سکیورٹی فورسز کا آپریشن ،طالبان کمانڈر سمیت 68ہلاک ،52زخمی

کابل ،ڈرون حملہ ،سکیورٹی فورسز کا آپریشن ،طالبان کمانڈر سمیت 68ہلاک ،52زخمی

کابل (آئی این پی)افغانستان میں امریکی ڈرون حملے اور نیشنل سیکورٹی فورسز کے آپریشن میں طالبان کے سینئر کمانڈرسمیت 68عسکریت پسند ہلاک اور52 زخمی ہوگئے ۔اتوار کو افغان میڈیا کے مطابق صوبہ لوگر میں امریکی ڈرون حملے میں سینئر طالبان کمانڈر ہلاک ہوگیا۔حکام کا کہنا ہے کہ ڈرون حملے میں ضلع براکی براک میں طالبان کے ملٹری کمیشن کے سربراہ مولوی حبیب الرحمان کو نشانہ بنایا گیا۔ضلع براکی براک کے گورنر محمد رحیم امین کا کہنا ہے کہ چولزئی کے علاقے میں ہونے والے ڈرون حملے میں مولوی رحمان کے تین ساتھی جنگجو بھی مارے گئے ۔انکا مزید کہنا تھاکہ مولوی حبیب الرحمان گزشتہ کئی سالوں سے ضلع میں دہشتگردانہ سرگرمیو ں میں ملوث تھے انکی ہلاکت کے بعد علاقے میں سیکورٹی کی صورتحال میں بہتری آئے گی ۔ادھر ملک کے مختلف حصوں میں نیشنل سیکورٹی فورسز کے آپریشن میں64عسکریت پسند ہلاک اور52 زخمی ہوگئے ۔ وزارت داخلہ کی طرف سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں میں سیکورٹی فورسز نے صوبہ لوگر ،غزنی ،خوست،ہرات،تخار،فریاب،ہلمند،زابل اور ارزگان میں آپریشن کیے جن میں 64 جنگجو ہلاک اور 52 زخمی ہوگئے ۔بیا ن میں مزید کہا گیا ہے کہ سیکورٹی فورسز نے آپریشن کے دوران 15 مختلف دیسی ساختہ بم ڈیوائسز بھی قبضے میں لے کر ناکارہ بنادیں۔

مزید : علاقائی