صرف 12گھنٹے اور دنیا صفہ ہستی سے مٹ جائے گی،اگر۔۔۔

صرف 12گھنٹے اور دنیا صفہ ہستی سے مٹ جائے گی،اگر۔۔۔
 صرف 12گھنٹے اور دنیا صفہ ہستی سے مٹ جائے گی،اگر۔۔۔

  


لندن (نیوز ڈیسک) زمین کی تباہی کے متعلق مختلف خدشات سامنے آتے رہے ہیں لیکن ان میں سے شائد ہی کوئی خدشہ شمسی طوفان کے خدشے سے زیادہ خوفزدہ کرنے والا ہو۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ سورج سے نکلنے والی آگ اور شعاعوں کا طوفان زمین پر قیامت برپا کرنے کا سبب بنے گا اور اس طوفان کا علم ہونے کے محض 12 گھنٹے بعد زمین پر ہر چیز تہہ و بالا ہوجائے گی۔شمسی طوفان کے نتیجے میں زمین پر بے انتہا تباہی ہوگی۔ اڑتے ہوئے جہاز زمین پر آن گریں گے، ریل گاڑیاں پٹڑیوں سے اتر جائیں گی، الیکٹرانک آلات کام کرنا بند کردیں گے اور بجلی کی فراہمی بند ہوجائے گی۔ سیٹلائٹ ٹیکنالوجی پر انحصارکرنے والے آلات، مثلاً موبائل فون، ریڈیو، ٹی وی، انٹریٹ اور بینکنگ ٹیکنالوجی ناکارہ ہوجائے گی جس کے نتیجہ میں عالمی اقتصادیات بھی منہدم ہوجائے گی۔ برطانوی کیبنٹ آفس کا کہنا ہے کہ شمسی طوفان سے بچنے یا اس کے مقابلے کیلئے کوئی طاقت یا تیاری نظر نہیں آتی۔سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ شمسی طوفان سورج سے نکلنے والی بے پناہ توانائی، ایکس ریز اور شعاعوں کا مجموعہ ہوگا جس کے نتیجے میں سب سے بڑا خطرہ ایٹمی تباہی کی صورت میں رونما ہوگا۔ شمسی طوفان کی وجہ سے نہ صرف ایٹمی پلانٹ پھٹ پڑیں گے بلکہ ایٹمی ہتھیار بھی خود بخود چل جائیں گے جس کا نتیجہ دنیا کی تباہی کی صورت میں سامنے آئے گا۔

مزید : صفحہ آخر