کرکٹ کے میدان میں فیصلہ دینے والے امپائرز خود آزمائش میں پڑ گیا، پی سی بی نے ٹیسٹ میچ آفیشلز کے ٹیسٹ کروانے کا فیصلہ کر لیا مگر کیا چیک کیا جائے گا؟

کرکٹ کے میدان میں فیصلہ دینے والے امپائرز خود آزمائش میں پڑ گیا، پی سی بی نے ...
کرکٹ کے میدان میں فیصلہ دینے والے امپائرز خود آزمائش میں پڑ گیا، پی سی بی نے ٹیسٹ میچ آفیشلز کے ٹیسٹ کروانے کا فیصلہ کر لیا مگر کیا چیک کیا جائے گا؟

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) کرکٹ کے میدان میں فیصلے دینے والے امپائرز خود آزمائش میں پڑ گئے ہیں کیونکہ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے نئے ڈومیسٹک سیزن سے قبل میچ آفیشلز کے ٹیسٹ کرانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ 

تفصیلات کے طابق پی سی بی نے نئے ڈومیسٹک سیزن سے قبل میچ آفیشلز کی آئی سائٹ اور کان چیک کرانے کا فیصلہ کیا ہے اور سی ایم ایچ سے ٹیسٹ کرانے کیلئے خطوط لکھ دئیے گئے ہیں لیکن جہاں سی ایم ایچ نہیں وہاں کے میچ آفیشلز مقامی ڈی ایچ کیو سے ٹیسٹ کرائیں گے۔

ذرائع کے مطابق سی ایم ایچ نے انتظامی معاملات اور چھٹیوں کے باعث ٹیسٹ کرنے سے معذرت کرلی ہے،اس کے بعد تمام میچ آفیشلز ٹیسٹ کرانے کیلئے پریشانی کا شکار ہوگئے ہیں، بورڈ کا میڈیکل پینل متبادل آپشنز پرغور کررہا ہے، ماضی میں ریفریشر کورسز کے دوران میچ آفیشلز کے ٹیسٹ پی سی بی کی نگرانی میں ہوتے تھے۔

ذرائع کے مطابق میچ آفیشلز سے کرکٹ میں اہلیت سمیت کوائف بھی طلب کئے گئے ہیں جس کے باعث میچ آفیشلز میں بے چینی کی لہر دوڑ گئی ہے جبکہ 3 انٹرنیشنل امپائرز آصف یعقوب، ضمیر حیدر اور شوذب رضا کا کیرئیر خطرے میں پڑ گیا ہے۔ 

واضح رہے کہ بورڈ کے پینل آف امپائرز میں صرف15 فرسٹ کلاس اور انٹرنیشنل کرکٹرز شامل ہیں، ترجمان پی سی بی کا کہنا ہے کہ موجودہ صورتحال کے پیش نظر سی ایم ایچ سے ٹیسٹ کرانے کا فیصلہ کیا، سی ایم ایچ کی معذرت کے بعد میڈیکل پینل متبادل آپشنز پر غور کررہا ہے جبکہ میچ آفیشلز کے کوائف طلب کرنا معمول کی بات ہے۔

مزید :

کھیل -