غیر ملکی کھلاڑیوں کو کشمیر پریمیئر لیگ سے دستبردار ہونے کی بھارتی دھمکیاں ،  وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نےآئی سی سی سے بڑا مطالبہ کردیا

غیر ملکی کھلاڑیوں کو کشمیر پریمیئر لیگ سے دستبردار ہونے کی بھارتی دھمکیاں ، ...
غیر ملکی کھلاڑیوں کو کشمیر پریمیئر لیگ سے دستبردار ہونے کی بھارتی دھمکیاں ،  وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نےآئی سی سی سے بڑا مطالبہ کردیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نےغیر ملکی کھلاڑیوں کوکشمیر پریمیئر لیگ (کے پی ایل)سے دستبردار ہونے کی بھارتی دھمکیوں کی مذمت کرتے ہوئے انٹرنیشنل کرکٹ کونسل(آئی سی سی)سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ غیر ملکی کھلاڑیوں کوکشمیر پریمیئر لیگ سے دستبردار ہونے کی بھارتی دھمکیوں کا نوٹس لے جس کی وجہ سے غیر ملکی کھلاڑی کشمیر پریمیئر لیگ (کے پی ایل) سے دستبردار ہو گئے۔

 ایک بیان میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ انہیں سمجھ نہیں آرہی ہے کہ بھارت کے پی ایل سے کیوں ڈرتا ہے؟ میں نہیں سمجھ سکتا کہ بھارت کے پی ایل سے کیوں ڈرتا ہے؟ یہ آزاد کشمیر میں معمول کی سرگرمیوں کا صرف ایک ثبوت ہے،میں غیر ملکی کھلاڑیوں پر کے پی ایل میں نہ کھیلنے کے بھارتی دباؤ کی شدید مذمت کرتا ہوں، یہ صرف ان کے قد کو کم کرے گا اور پاکستان کو اس سے کوئی فرق نہیں پڑے گا۔

وزیر خارجہ نے آئی سی سی پر زور دیا کہ وہ غیر ملکی کھلاڑیوں کو کے پی ایل سے دستبردار ہونے کی بھارت کی دھمکیوں کا نوٹس لے، آئی سی سی کو اس معاملے کا نوٹس لینا چاہیے، بھارت اگر چاہے تو مقبوضہ کشمیر میں ایسی لیگ بھی کروا سکتا ہے ،ہم نے کب ان کو روکا ہے؟۔

شاہ محمود قریشی کشمیر کے کھلاڑیوں کو انٹرنیشنل کرکٹ تک جانے کا پلیٹ فارم فراہم کرنے کے لیے کے پی ایل کے لیے پرامید ہیں، کے پی ایل کشمیر کے علاقے میں باصلاحیت کھلاڑیوں کو تلاش کرنے کی طرف ایک مثبت قدم ہے، ہم سب کو کے پی ایل کو فروغ دینا چاہیے۔

مزید :

قومی -کھیل -