آئندہ دہائی میں لڑکیاں کم پیدا ہوں گی کیونکہ ۔ ۔ ۔ ایسا دعویٰ کہ مردوں کی بھی حیرت کی انتہاءنہ رہے گی 

آئندہ دہائی میں لڑکیاں کم پیدا ہوں گی کیونکہ ۔ ۔ ۔ ایسا دعویٰ کہ مردوں کی بھی ...
آئندہ دہائی میں لڑکیاں کم پیدا ہوں گی کیونکہ ۔ ۔ ۔ ایسا دعویٰ کہ مردوں کی بھی حیرت کی انتہاءنہ رہے گی 

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا میں مردوخواتین کا تناسب پہلے ہی دگرگوں ہے اور اب نئی تحقیق میں اس حوالے سے پریشان کن نتائج سامنے آ گئے ہیں۔

 نجی ٹی وی چینل 24نیوز کے مطابق ماہرین نے اپنی اس تحقیق میں بتایا ہے کہ آئندہ عشرے کے دوران عالمی سطح پر 50لاکھ لڑکیاں کم پیدا ہوں گی، جس کے بعد مردوں اور خواتین کی تعداد کا تناسب مزید بگڑ جائے گا۔

ماہرین نے اگلے 10سالوں میں پچاس لاکھ لڑکیاں کم پیدا ہونے کی وجہ بیان کرتے ہوئے کہا ہے کہ دنیا کے کئی ممالک میں لوگ بیٹوں کو ترجیح دیتے ہیں۔انہی جنسی ترجیحی سرگرمیوں کی وجہ سے ہر سال لڑکیوں کی تعداد میں تیزی سے کمی واقع ہو رہی ہے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ 2030ءتک پیدا ہونے والے لڑکے لڑکیوں کی تعداد کا تناسب ایک تین تک پہنچنے کا خدشہ ہے اور یہ صورتحال سماج مخالف روئیے اور تشدد میں اضافے کا سبب بنے گی۔ یہ تحقیقاتی رپورٹ طبی جریدے ’بی ایم جے‘ میں شائع ہوئی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -