محرم الحرام کی آمد ، علامہ طاہر اشرفی نے دشمن کی تمام سازشیں ایک ،ایک کر کے گنوا دیں ،علماء و مشائخ کے سامنے دل کھول کر رکھ دیا 

محرم الحرام کی آمد ، علامہ طاہر اشرفی نے دشمن کی تمام سازشیں ایک ،ایک کر کے ...
محرم الحرام کی آمد ، علامہ طاہر اشرفی نے دشمن کی تمام سازشیں ایک ،ایک کر کے گنوا دیں ،علماء و مشائخ کے سامنے دل کھول کر رکھ دیا 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم کے نمائندہ خصوصی علامہ طاہر محمود اشرفی نےکہا ہے کہ پڑوس میں تبدیلی آ رہی ہے، افغانستان میں را کے دفاتر بے  نقاب ہو رہے ،بیس سال دہشت گری و انتہا پسندی کیخلاف جنگ کرکے اسے شکست دی ،ہم نے امریکہ کو ایبسلوٹلی ناٹ کہہ دیا ہے جس کی قیمت معلوم ہے ادا کرنا پڑےگی،تمام علما و ذاکرین واعظین متفقہ 14نکاتی ضابطہ اخلاق پر عمل درآمد یقینی بنائیں ،ہمیں اپنے مشترکات اور مقدسات کا احترام یقینی بنانا ہوگا ،بطور ریاست فیصلہ کیا ہے کہ  قانون شکنی نہ کرنے والوں کو چھیڑیں گے نہیں اور  قانون توڑنے والے کو چھوڑیں گے نہیں،علما تعاون کریں ریاست اپنے فیصلوں پر عمل کروائےگی۔

 اسلامی نظریاتی کونسل کے زیر اہتمام بین المسالک ہم آہنگی نشست سے خطاب کرتے ہوئے علامہ طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ بین المسالک حسن تعلق قائم ہوجائے تو ملک کیخلاف تمام سازشیں دم توڑ جائیں گی ،ایک دوسرے کے قریب اور دور کرنے پر بہت محنت ہوئی ہے،ملی یکجہتی کونسل کے قیام کے روز شیعہ سنی کے نام پر 15 لاشیں گری تھیں ،ہمارے اکابرین نے قتل و غارت کیخلاف قوم کو جمع کیا ،امام حسینؓ تو سب کے ہیں ،خوف ان ایام میں ہوتا ہے کہ دشمن اپنے کھیل سے ملک میں آگ نہ لگا دے ،ہم سب کو مل کر دشمن کی  ان سازشوں  کو ناکام بنانا ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ پیغام پاکستان کے نام سے متفقہ ضابطہ اخلاق طے کیا گیا ہے ،تمام علما و ذاکرین ، واعظین متفقہ 14نکاتی ضابطہ اخلاق پر عمل درآمد یقینی بنائیں ،ہمیں اپنے مشترکات اور مقدسات کا احترام یقینی بنانا ہوگا ،طے کیا ہے کہ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرنے والوں کی کوئی سفارش نہیں کرے گا ۔انہوں نے کہا کہ  پاکستان ایک دن مدینہ جیسی ریاست بنے گی ،سب کو آئین کی پاسداری کرنی ہے اور اس پر چلنا ہے ، کل سے پنجاب میں یکساں نظام تعلیم نافذ ہو چکا ہے ،یکساں نصاب میں اقلیتوں کا سب سے زیادہ تحفظ کیا گیا ہے ،یکساں نصاب تعلیم میں ایک جملہ ایسا نہیں ہے جس سے کسی مذہب یا مسلک کی دل آزاری ہو ۔انہوں نے کہا کہ متحدہ علما بورڈ نے کئی دن لگا کر ایک ایک کتاب کا جائزہ لیا ،اسلامی نظریاتی کونسل کی سفارشات کو قانونی شکل دی جائےگی، وزیراعظم بھی کہہ چکے ہیں اسلامی نظریاتی کونسل سفارشات دے، ہم اس پر عملدرآمد کرتے جائینگے ۔

علامہ طاہراشرفی نےکہاکہ اللہ اوراس رسولﷺنےعورت کو جو حق دیا وہ کوئی اور نہیں دے سکتا،عورت کو پاؤں کی جوتی سمجھا جاتا تھا،اسلام نے اسے عزت دی ،نور مقدم کیس دیکھ لیں جو ہم کہتے تھے اب وہ سب لوگ کہہ رہے ہیں ،نور مقدم کیس والدین اور بچوں کے آپس میں خلا ءکی وجہ ہے ،والدین اور بچوں میں اتنا فاصلہ پیدا نہ کریں کہ انہیں پتا ہی نہ چلے کہ ہو کیا رہا ہے؟ نور مقدم کیساتھ جو ہوا اکیلے میں سوچ کر بھی رونا آتا ہے ، چیف جسٹس کو خط لکھا ہے کہ بحالت مجبوری قانون میں ترمیم کی جائے ،کیا علماءنے کبھی کہا ہے کہ مسجد میں جرم کرنے والوں کو سزا نہ دو؟۔

انہوں نے کہا کہ محرم الحرام میں امن و امان کیلئے رابطہ دفاتر قائم کر دیئے ہیں، پاکستان کے علما و مشائخ سمیت تمام شعبہ زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد نے معاشرے کو تقسیم ہونے سے روکا ، مولانا سمیع الحقؒ، مولانا ضیاءالرحمان فاروقیؒ،  قاضی حسین احمدؒ،مولانا شاہ احمد نورانیؒ اور علامہ ساجد علی نقوی جیسے اکابرین نے فرقہ واریت کو ناکام بنایا ، آج ہمیں اسی جذبے کی ضرورت ہے کہ دشمنوں کی سازشوں کو سمجھیں اور ناکام بنائیں ۔

علامہ طاہر اشرفی نے کہا کہ علماء بورڈ لاہور میں رابطہ سیل قائم کردیا ہے ،پورے ملک میں تمام مکاتب فکر کے علمائے کرام مل کر بیٹھے ہیں ،چرچ، مدارس، امام بارگاہوں، افواج، پولیس اور عام شہری صرف اس لئے دشمن کا نشانہ بنتے ہیں کیونکہ وہ پاکستانی ہیں ، گزشتہ سال ایک جملہ نشر ہونے سے ملک کا امن داؤ پر لگ گیا تھا ،میڈیا بھی تھوڑی احتیاط کرے، سوشل میڈیا پر پرانی ویڈیوز کو نیا کرکے پھیلایا جا رہا ہے، مذہبی طبقے نے تحقیق کرنا بالکل ہی چھوڑ دی ہے ،صبح ہم یہودی، دن کو قادیانی اور شام کو عیسائی ہوتے ہیں ،رات کو کسی کو پسند آ جائیں تو مسلمان بنا دیا جاتا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ علما تعاون کریں ریاست اپنے فیصلوں پر عمل کروائےگی،ہم نے امریکہ کو ایبسلوٹلی ناٹ کہہ دیا ہے جس کی قیمت معلوم ہے ادا کرنا پڑےگی ، ہم نے واضح کردیا کہ ہم افغانستان میں امن کے ساتھی ہیں، امن کے لئے تیار ہیں،افغانستان نے اپنا فیصلہ خود کرنا ہے۔

مزید :

قومی -