’محرم الحرام کو بعض عناصر خون آلود کرنا چا ہتے ہیں ‘ چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل نے بڑے خطرے سے آگاہ کرتے ہوئے حل بھی بتا دیا

’محرم الحرام کو بعض عناصر خون آلود کرنا چا ہتے ہیں ‘ چیئرمین اسلامی نظریاتی ...
’محرم الحرام کو بعض عناصر خون آلود کرنا چا ہتے ہیں ‘ چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل نے بڑے خطرے سے آگاہ کرتے ہوئے حل بھی بتا دیا

  

 اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل ڈاکٹر قبلہ ایاز نے کہاہے کہ محرم الحرام  کو بعض عناصر خون آلود کرنا چا ہتے ہیں ،فرقہ ورانہ اور مسالک میں اختلافات پر مبنی مواد سوشل میڈیا ہر عام کیا جا رہا ہے،یہ موضوعات علماءاور ماہرین کے لئے ہوتے ہیں،گلی محلوں میں اس کو موضوعِ بحث نہیں بنانا چاہیے،اختلافات ختم نہیں ہو سکتے تاہم ان کو کم کیاجاسکتا ہے،بین المسالک ہم آہنگی ایک مسلسل عمل ہے ،حساس اداروں سے بھی مشاورت کی ہے کہ مسئلے کا باعث بننے والوں کی مانیٹرنگ کی جائے،مسائل پیدا کرنے والوں کیخلاف ایکشن ضروری ہے،امن و امان کو خراب کرنے والوں کیخلاف فوری کارروائی کی جانی چاہئے ۔

اسلام آباد میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر قبلہ ایاز کا کہنا تھا کہ سی پیک کو ناکام بنانے کے منصوبے بنائے جا رہے ہیں ،سی پیک کو کامیاب بنانے کے لئے مل کر کوشش کرنا ہو گی ،محرم الحرام کو خونی اور خوف کا مہینہ بنانے کی مزموم کوششیں کی جا رہی ہیں ،ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ مل کر ملک کے خلاف ہونے والی سازشوں کو ناکام بنائیں، توہین آمیزمواد کی مانیٹرنگ اور روک تھام کےلئے وزارتوں کی سطح پر کمیٹیاں بنادی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ  لاہور ہائی کورٹ نے اپنے ایک حالیہ فیصلے (9جون2021ء)میں مذہبی منافرت اور گمراہانہ کوششوں پر مبنی مواد کی روک تھام و بین المسالک/بین المذاہب ہم آہنگی کےلئے اقدامات کرنے کی ہدایت کی ہے،یہ کنونشن اس فیصلہ کی تحسین کرتے ہوئے امید کرتا ہے کہ متعلقہ حکومتی ادارے عدالتی فیصلے پر عمل درآمد کےلئے اپنا کردار ادا کریں گے،کسی ایسے مصنف اور واعظ کی حوصلہ افزائی نہیں کی جائےگی جو فرقہ واریت پھیلانے میں ملوث ہو۔

ڈاکٹر قبلہ ایاز نے کہا کہ سوشل میڈیا کو فرقہ واریت پھیلانے کے لیے استعمال کرنے والے عناصر کو قانون کے دائرے میں لانے کے لیے بلاتفریق مسلک و مذہب قانون نافذ کرنے والے اداروں سے تعاون کیا جائے گا، حکومتی سطح پر ایسی شخصیات کو سامنے لانے کا اہتمام کیا جائے جو اتحادِ امت کی داعی ہوں،ان کوششوں کےلئے بلا خوف وخطر واشگاف موقف اختیار کیا جائے گا۔

مزید :

قومی -