جامعہ اشرفیہ کے سابق مدرس قاری صدیق لکھنوی انتقال کر گئے ،سپردخاک

جامعہ اشرفیہ کے سابق مدرس قاری صدیق لکھنوی انتقال کر گئے ،سپردخاک

  

لاہور (سٹاف رپورٹر)جامعہ اشرفیہ کے شعبہ تجوید کے سابق صدر مدرس اورجا معہ رحمانیہ کے صدر مدرس استادالقراءحضرت مولا نا قاری محمد صدیق لکھنوی گزشتہ روز انتقال کر گئے انہےں لا ہور میںسپردخاک کر دیا گیا مر حوم کی نمازجناز ہ جامع مسجد ڈی ڈی ڈیفنس میں ادا کی گئی ،نماز جنازہ جے یو آئی کے راہنماءاور جامعہ رحمانیہ کے ناظم اعلی مو لا نا محمد امجد خان نے پڑھائی جبکہ نمازجنازہ میں مو لا نا ڈاکٹر سرفراز احمد اعوان ،مو لا نا پیر سیف اللہ خالد ،مو لا نا قاری احمد میاں تھانوی ،مو لا نا محب النبی،مو لا نا مفتی عزیز الرحمن،صاحبزادہ رئیس احمد صدیقی،قاری انوار الحسن شاہ،مو لا نا مفتی رشیداحمد علوی،قاری فاروق عباسی ،سلیم احمد صدیقی ،مو لا نا حافظ اشرف گجر،قاری عبد الغفار،قاری غلام فرید، محمد نعیم احمد صدیقی،عبد القادر،قاری حمید الرحمن،حافظ عبد الواجد، قاری ریحان احمد،محمد عابد ناز ،حافظ محمد فارق ،حافظ محمد عامر ،محمد علی رضاسمیت بڑی تعداد میں علماءاور قراء،اور عوام نے شرکت کی اس موقع پر مو لا نا محمد امجد خان،ڈاکٹر سرفراز احمد اعوان،مو لا نا پیر سیف اللہ خالد،مو لا نا محب النبی،مفتی رشید احمد علوی نے خطاب کرتے ہوئے قاری محمدصدیق احمد لکھنوی کی علمی، تدریسی خدمات پرخراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم سچے عاشق رسول تھے ساری زندگی اسوہ رسول کو پھیلانے اور قر آن مجید کی اشاعت میں گذار ی انہوں نے کہا کہ مرحوم کے پا کستان میں ہی نہیں بلکہ بہت سے ممالک میں نامور شاگرد دین کی خدمت میں مصرو ف ہیں جو آپ کے لیئے صدقہ جاریہ ہے انہوں نے کہا کہ ضرورت اس بات کی ہے کہ اسوہ رسول پر عمل کیا جا ئے اور تلاوت قرآن مجید کو اپنا معمول بنا یا جا ئے انہوں نے کہا کہ فکرے اخرت کی سوچ رکھنے والے ہی دنیا وآخرت میںکامیاب ہوں گے ۔ جے یو آئی کے مر کزی سیکر ٹری جنرل مو لا نا عبد الغفور حیدری اور دیگر راہنماﺅں مو لا نا حافظ حسین احمد ،مو لا نا رشید احمد لدھیانوی ،مو لا نا جمیل الرحمن در خواستی ،مو لا نا ڈاکٹر عتیق الرحمن نے مو لا نا قاری محمدصدیق لکھنوی کی وفات پر گہرے دکھ اور غم کا اظہارکرتے ہو ئے کہا کہ مرحوم نے ساری زندگی قر آن مجید کی خدمت کرتے ہوئے گزار ی انہوں نے کہا کہ مر حوم نے جامعہ اشرفیہ اور جامعہ رحمانیہ اور دیگر اداروں میں فن قرا¿ت سکھانے کے لیئے جو خدمات سر انجام دی ہیں وہ مددتوں یار رہیں گی انہوںنے مرحوم کے درجات کی بلندی اور خاندان کے لیئے صبر کی دعا بھی کی ہے ۔دریں اثناءمو لا نا فضل الرحیم اشرفی ،مو لا نا محمد اکرم کاشمیری ،مو لا نا رشید میاں ،مو لا نا محب النبی،مو لا نا قاری احمد میاں تھا نوی،مو لا ناقاری ارشد عبید،مو لا نا قاری مومن شاہ،مو لا نا قاری احمد دین ،قاری محمد ادریس طارق ، ،مو لانا قاری ثناءاللہ ،مو لا نا مجیب الرحمن انقلابی ،مو لا نا قاری محمد عثمان ،حافظ عبد الواجدنے بھی مو لا نا قاری محمد صدیق لکھنوی کی وفات پر گہرے غم کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مرحوم کا شمار ملک نامور قراءمیں ہو تا تھا۔

مزید :

صفحہ آخر -