جنرل( ر) ضیا ءالدین کی ملازمت کی مراعات و جائیداد ضبطگی کیخلاف کیس کی سماعت ملتوی، حکومت سے تفصیلی جواب طلب

جنرل( ر) ضیا ءالدین کی ملازمت کی مراعات و جائیداد ضبطگی کیخلاف کیس کی سماعت ...

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس اعجاز الا حسن نے جنرل( ر) ضیا ءالدین بٹ کی طرف سے سابق صدر پرویز مشرف کے ہاتھوں 12 اکتوبر 1999 ءکواپنی بر طرفی کے نتیجے میں ملازمت کی مراعات و جائیداد ضبطگی کیخلاف کیس کی مزیدسماعت 9 دسمبر تک ملتوی کر تے ہوئے وفاقی حکومت سے تفصیلی جواب طلب کر لیا۔ لاہور ہائیکورٹ میں کیس کی سماعت شروع ہوئی تو عدالت کے روبرو بتایا گیا کہ سابق آرمی چیف ضیاالدین بٹ کی جائیداد پرویز مشرف کے دور میں ضبط کی گئی تھی جو کہ اب نہ تو واپس کی جا رہی ہے اور نہ سابق آرمی چیف کو مراعات دی جا رہی ہیں جو غیرقانونی اقدام ہے۔عدالت کے روبرو وفاقی حکومت کے وکیل نے بتایا کہ انکی جائیداد فروخت نہیں کی جا رہی ، انہوں نے وفاقی حکومت کی جانب سے جواب داخل کرنے کے لئے مہلت کی استدعا کی ۔ عدالت نے درخواست گزار کو مراعات کی بحالی کے لئے الگ درخواست دائر کرنے کی ہدایت کردی اور وفاقی حکومت کے وکیل کی جواب دینے کے لیے مہلت کی استدعا منظور کرتے ہوئے کیس کی مزیدسماعت 9 دسمبر تک ملتوی کر دی۔

ضیاءالدین

مزید :

صفحہ آخر -