جلالپور پیر والا تااوچ شریف نیشنل ہائی وے کی تعمیر کا منصوبہ کھٹائی میں پڑ گیا

جلالپور پیر والا تااوچ شریف نیشنل ہائی وے کی تعمیر کا منصوبہ کھٹائی میں پڑ ...

اوچ شریف(سٹی رپورٹر ،نمائندہ پاکستان ) 3 ارب20 کروڑ کی لاگت سے جلال پور پیر والہ تا اوچ شریف نیشنل ہائی وے کی تعمیر کا منصوبہ کھٹائی میں پڑ گیا ، کنٹریکٹ کے مطابق دسمبر 2011میں مکمل ہونے کی حتمی تاریخ کے باوجود 2016میں بھی منصوبہ مکمل نہ ہوسکا ، شیخ حسنین پروجیکٹ ڈائریکٹر اعجاز خان ڈیوالہ ، شیخ ا مین حسن ،رفیق احمد ،اجمل حسین ،ابراہیم ،جام جمیل احمد محمد معشوق و دیگر درجنوں افراد نے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے بتایا کہ سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی نے اوچ شریف تا جلال (بقیہ نمبر36صفحہ12پر )

پور پیر والہ دو رویہ سڑک کی تعمیر،پل ایمن والہ کے مقام پر موسیٰ پاک شہید پل کی تعمیرکے منصوبہ کا باقاعدہ افتتاح کیا ، اس منصوبے کی تکمیل سے کراچی اور لاہور ، ملتان کے درمیان 55کلومیٹر کا فاصلہ بھی کم ہو جائے گا ، اور یہ منصوبہ جات تین ارب 20کروڑ روپیہ کی لاگت سے دسمبر 2011میں مکمل ہونا تھے ،مگر یہ منصوبہ گزشتہ کئی سال سے کھٹائی میں پڑ گیا ہے اور2016ء میں بھی اوچ شریف تا جلالپور کے نیشنل ہائی وے فیز کا ساٹھ فی صد سے زائد کام ابھی نامکمل ہے ،جگہ جگہ اکھاڑ کے باعث یہاں سے گزرنے والی ٹرانسپورٹ کے مسافروں کو شدید مشکلات کے ساتھ ساتھ قیمتی گاڑیاں کھٹارہ بنتی جا رہی ہیں ،اس کے علاوہ گرد وغبار کے باعث قریبی علاقوں کے مکین سانس کی مختلف بیماریوں کا شکار ہو چکے ہیں ،ناہموار سڑک کے باعث حادثات معمول بن چکے ہیں اور کئی قیمتی جانیں ان حادثات میں لقمہ اجل بن چکی ہیں ،انہوں نے وزیر اعظم پاکستان ، چئیرمین این ایچ اے و دیگر اعلیٰ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ اس منصوبہ کی تکمیل اور متاثرین کے معاوضہ کے لئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کئے جائیں،دوسری جانب اس منصوبہ کے پروجیکٹ ڈائریکٹر شیخ حسنین نے رابطہ پر بتایا کہ فنڈز نہ ہونے کے باعث منصوبہ کی تکمیل تاخیر کا شکارہے تاہم ابھی اس کے فنڈز بہت جلد ریلیز ہو جائیں گے جس کے باعث اس منصوبہ پر کام شروع ہو جائے گا ۔

کھٹائی

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...