ضلعی حکومت ‘ مارکیٹ کمیٹی کی عدم توجہی ‘ سہولت بازاروں میں کنٹرول نرخ مذاق بن گئے

ضلعی حکومت ‘ مارکیٹ کمیٹی کی عدم توجہی ‘ سہولت بازاروں میں کنٹرول نرخ مذاق ...

ملتان(خبرنگار)ضلعی حکومت اور مارکیٹ کمیٹی کی عدم توجہ سہولت بازاروں میں کنٹرول نرخ مذاق بن کر رہ گئے گرانفروشی کا سلسلہ عروج پر رہا اور دوکاندار مرضٰ کے نرخوں پر اشیائے خورونوش سبزی اور پھل فروخت کرتے رہے ضلعی حکومت اور ٹاونز نے اپنی ذمہ داری سہلوتوں بازاروں میں ٹینٹ کا سامان مہیا کرنا اور پینا فلیکس آویزاں کرنے جبکہ مارکیٹ کمیٹٰ نے صرف ریٹ لسٹیں جاری کرنے تک محدود کر رکھی ہے ضلعی حکومت اور ٹاونز کے زیر انتظام شہر کے چار سہولت بازاروں جن میں شمس آباد، باغ لانگے خان، (بقیہ نمبر38صفحہ12پر )

مدنی چوک اور ممتاز آباد شامل ہیں گذشتہ روز گرانفروشنی کا سلسلہ عروج پر رہا مارکیٹ کمیٹی کی طرف سے سہولت بازار وں میں بیسن 136روپے، چینی 65روپے، چاول کچی، باسمتی بڑی 78روپے، چاول پکی ، باسمتی بڑی 74، چنا سفید موٹا 154، دال چنا موٹی 140، دال ماش دھلی باریک 174 روپے، دال مونگ دھلی 100روپے فی کلو کے نرخ مقرر کئے گئے تھے اور مذکورہ اشیا میں سے ایک بھی کنٹرول نرخ میں دستیاب نہیں ہیں۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...