کسی کے اسلام قبول کرنے پر پابندی نہیں ہونی چاہیے، لیاقت بلوچ

کسی کے اسلام قبول کرنے پر پابندی نہیں ہونی چاہیے، لیاقت بلوچ

ملتان (سٹی رپورٹر)جماعت اسلامی پاکستان وملی یکجہتی کونسل کے مرکزی سیکر ٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ سندھ اسمبلی میں منظور ہونیوالا تبدیلی مذہب کا قانون آئین پاکستان اور اقوام متحدہ کے چارٹر کے خلاف ہے ہم کسی کو زبردستی مسلمان بنانے کے خلاف ہیں لیکن اگر کوئی اپنی مرضی سے اسلام قبول کرتا ہے تو اس پر پابندی نہیں ہونی چاہئے ۔ جماعت اسلامی اقلیتوں کے حقوق کی محافظ ہے ہم نے ہمیشہ آئین پاکستان کے تحت ان کے حقوق کا تحفظ کیا اس قانون کے خلاف دینی جماعتوں کا اجلاس6دسمبر کو کراچی میں ہوگا۔ ان خیا لات کا اظہار انہوں نے پی پی198 کے گروپ لیڈر ڈاکٹر صفدر اقبال ہاشمی کی جانب سے دیئے جانیوالے استقبالیہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ تقریب سے جماعت اسلامی پاکستان کے مرکزی نائب امیر میاں محمد اسلم، ملک محمد رمضان روہاڑی ، میاں آصف محمود اخوانی، عظیم الحق پیرزادہ، محمد رفیع رضا، چودھری ظفر اقبال آرائیں، اسرارالہی نے بھی خطاب کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہندوستان کا جارحانہ جنگی جنون پر مبنی رویہ خود ہندوستان کو تباہ کرے گا۔ ۔جنرل راحیل شریف نے اپنے وقت مقررہ پر ریٹائر منٹ لے کر اچھی روایت قائم کی ہے نئے سپہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ سے قوم کو بڑی اُمیدیں وابستہ ہیں اُمید ہے کہ وہ ان امیدوں پو پورا اُتریں گے ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کا وزیر خارجہ کا نہ ہونا ملک کی بدقسمتی ہے ۔جماعت اسلامی پاکستان کے مرکزی نائب امیر وسابق رکن قومی اسمبلی میاں محمد اسلم نے کہا کہ اللہ تعالیٰ کا حکم ہے کہ اپنی امانتیں امانت داروں کے حوالے کرو۔ پانا ما لیکس کی لسٹ میں شامل550لٹیروں کا تعلق حکومت اور اپوزیشن کی پارٹیوں سے ہے ۔سپریم کورٹ عدالتی کمیشن تشکیل دے پہلے مرحلے پر ان کی تحقیقات کرے اور قومی دولت لوٹنے والوں کو پھانسی دی جائے اور لوٹی ہوئی دولت واپس لائی جائے تاکہ ملک کے قرضے اُتریں اور ملک خوشحال ہو۔ تقریب میں ضلعی امیر میاں منیر احمدبودلہ، صہیب عمار صدیقی ، ڈاکٹر اشرف علی عتیق، کنور محمد صدیق، عبدالرحمن حیدری سمیت سینکڑوں معززین نے شرکت کی۔علاوہ ازیں نیشنل لیبر فیڈریشن پاکستان ( ملتان) کے عہدیداروں سے خطاب کرتے ہوئے جماعت اسلامی پاکستان کے مرکزی سیکر ٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ حکومت پنجاب نے ماضی میں سکیل اپ گریڈ کرتے وقت نائب قاصد، مالی، چوکیدار وسیکورٹی گارڈ اور دوسرے 1تا 4 سکیل کے ملازمین میں6 سکیلوں کا اضافہ کیا تھا اس طرح سے ملازمین کے درمیان تفریق کی گئی جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ہم حکومت پنجاب سے مطالبہ کرتے ہیں کہ درجہ چہارم کے ملازمین کو جونیئر کلرک کی طرح6سکیل مزید دیتے ہوئے 7(ساتواں) سکیل دیا جائے ۔اس موقع پر نیشنل لیبر فیڈریشن ملتان کے عہدیداران ظفر طاہر محمود ، اشفاق بلوچ، عاقل قریشی، محمد عاصم بھٹی، صوفی محمد صدیق، محمد رمضان بھی موجود تھے۔دریں اثناء صدر انجمن تاجران صدر بازار ملتان کینٹ ومرکزی نائب صدر انجمن تاجران کنٹونمنٹس پنجاب چوہدری محمود علی کی طرف سے سابق رکن قومی اسمبلی ومرکزی رہنما جماعت اسلامی لیاقت بلوچ وتاجر رہنماؤں اور ممبران کینٹ بورڈ کے اعزاز میں عشائیہ دیا گیا ۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی لیاقت بلوچ نے کہا کہ ملک کو خوشحالی اور ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کے لئے انقلابی اقدامات اور تبدیلیوں کی ضرورت ہے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے میزبان چوہدری محمود علی نے کہا کہ حکومت کو چاہئے کہ قوم کو معاشی بدحالی سے نجات دلانے کے لئے عوام وتاجر دوست پالیسیاں نافذ العمل کی جائیں۔ تقریب سے آصف محمود اخوانی، محمد اسلم ممبر کینٹ بورڈ چوہدری طارق نیاز، غضنفر ملک، معظم وحید خواجہ اور چوہدری محمد علی نے بھی خطاب کیا جبکہ رانا اشرف، شیخ اسلم، رفاقت مسیح، نسیم بیگ، محمد عثمان، محمد رافع، فرید چوہان، کلب عابد، چوہدری مبشر، فرحان قریشی، ابرار احمد، اختر حسین ودیگر شریک تھے۔

بہاولپور ( بیورورپورٹ)جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل(بقیہ نمبر38صفحہ7پر )

لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ ا لیکشن کمیشن کو انتظامی اختیارات سپریم کورٹ کی طرز پر دیئے جائیں حکومت این ایف سی ایوارڈ کو جلد مکمل کرکے پیدا ہونے والے شکوک شبہات ختم کرے چھوٹے انتظامی یونٹ بنانا وقت کی اہم ضرورت ہیں وہ کرافٹ بازار کے ہال میں پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے اس موقع پر مرکزی نائب امیر میاں محمد اسلم اور پارلیمانی لیڈر پنجاب اسمبلی ڈاکٹر سید وسیم اختر بھی ان کے ہمراہ تھے لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ جماعت اسلامی ملک میں ایک ایسے نظام کے لیے جدوجہد کر رہی ہیں جس اسلامی بھی ہو اور فلاحی بھی ہو ملک میں وسائل کی کمی نہیں ہے اور نہ ہی قوم میں صلاحیتوں کی کمی ہے اگر ایک دیانت دار قیادت میسر آجائے تو پاکستان ایک خوشحال ملک بن سکتا ہے انہوں نے کہا کہ نظریاتی ،معاشی ،انتخابی کرپشن نے ملک کی جڑوں کو کھوکھلا کر کے رکھ دیا ہے کرپشن کیخلاف جماعت اسلا می پورے ملک میں مہم چلا رہی ہے انہوں نے کہا کہ تین چار ہزار کرپٹ لوگوں نے اس ملک کے وسائل کو لوٹا ہے اور دینا بھر میں ملک کو بدنام کیا ہے جماعت اسلامی آئین کے تناظر میں سپریم کورٹ میں پٹیشن دائر کی ہے تاکہ سپریم کورٹ عدالتی کمیشن بنائے اور وہ ٹی او آر بنائیں جن پر تمام جماعتیں متفق تھی تاکہ تمام کرپٹ ٹولے کا احتساب ہو سکے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...