جعلی ڈگری کیس‘ سابق رکن قومی اسمبلی دیوان عاشق بخاری کو سزا دینے کی درخواست پر شکایت کنندہ کا بیان قلمبند ‘ سماعت 16 جنوری تک ملتوی

جعلی ڈگری کیس‘ سابق رکن قومی اسمبلی دیوان عاشق بخاری کو سزا دینے کی درخواست ...

ملتان(نمائندہ خصوصی) سیشن جج ملتان نے سابق ممبر قومی اسمبلی دیوان عاشق حسین بخاری کو بی ا ے کی بوگس ڈگری رکھنے پر سزادینے کی درخواست پرشکایت کنندہ کابیان قلمبند کرکے سرسری شہادت کے لئے سماعت 16 جنوری (بقیہ نمبر41صفحہ12پر )

تک ملتوی کرنے کا حکم دیاہے۔فاضل عدالت میں ریجنل الیکشن کمشنر ملتان شمشاد خان نے درخواست دائر کی تھی کہ حلقہ این اے 153 ملتان سے سال 2008ء کے انتخابات میں دیوان عاشق حسین بخاری نے دیگر امیدواروں کے ساتھ کاغذات نامزدگی جمع کرائے اورکاغذات کے ساتھ شاہ عبداللطیف بھٹائی یونیورسٹی سے حاصل کردہ بی اے کی سند بھی پیش کی اور5 سال کا عرصہ مکمل کرنے کے بعد سال 2013 ء کے انتخابات میں حصہ لیا اوردوبارہ کامیاب قرارپائے جس پر مخالف امیدوار راناقاسم نون نے ان کی اہلیت کو جعلی سند اوربنک نادہندہ ہونے پر چیلنج کیا جس پر الیکشن ٹربیونل بہاولپور نے بی اے کی سند کو بدنیتی اورفراڈ پر مبنی قراردے کر نااہل قراردیا اورسپریم کورٹ نے بھی اس فیصلے کو برقراررکھاہے اس لئے جعلی سند رکھنے پر قانون کے مطابق ان کے خلاف کارروائی کرنے کا حکم دیاجائے۔

سماعت ملتوی

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...