پنجاب ایجوکیشنل انڈومنٹ فنڈنےشعبہ تعلیم میں انقلاب کی بنیاد رکھ دی ، شہباز شریف

پنجاب ایجوکیشنل انڈومنٹ فنڈنےشعبہ تعلیم میں انقلاب کی بنیاد رکھ دی ، شہباز ...

 لاہور(جنرل رپورٹر)وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ تعلیم،تیزرفتار ترقی کا واحد زینہ ہے۔پنجاب حکومت نے معیاری تعلیم کے فروغ اورنئی نسل کو زیور تعلیم سے آراستہ کرنے کیلئے انقلاب آفرین اقدامات کیے ہیں ۔پنجاب ایجوکیشنل انڈومنٹ فنڈ نے تعلیم کے شعبہ میں انقلاب کی بنیاد رکھ دی ہے اور اس تاریخ ساز و منفرد تعلیمی فنڈنے کم وسیلہ خاندانوں کے ذہین طلبا و طالبات پر معیاری تعلیم کے دروازے کھول دےئے ہیں ۔اگر70سال قبل ایسا تعلیمی فنڈ قائم کردیا جاتاتو پاکستان میں کوئی بچہ تعلیم کے زیور سے محروم نہ ہوتابلکہ کروڑوں بچے تعلیم کے زیور سے آراستہ ہوکر وطن کی تعمیر وترقی میں اپنا کردار ادا کررہے ہوتے اورآج پاکستان کو کسی محاذ پر بھی نہ تو ہزیمت کا سامنا کرنا پڑتا اور نہ ہی اس سے کوئی ڈومورکا مطالبہ کرتا۔وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے ان خیالات کا اظہار گزشتہ روز اسلامیہ یونیورسٹی بغدادالجدید کیمپس میں پنجاب ایجوکیشن انڈوومنٹ فنڈ کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔وزیراعلیٰ نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں اشرافیہ نے دھونس دھاندلی اور دیگر طریقوں سے اپنے بچوں کیلئے تو اعلی تعلیم کے مواقع پیدا کررکھے ہیں جبکہ مفلوک الحال اور محروم معیشت طبقات کے بچے بنیادی تعلیمی سہولتوں سے بھی محروم ہیں۔پنجاب حکومت نے پنجاب ایجوکیشنل انڈومنٹ فنڈجیسے تعلیمی پروگرام شروع کر کے امیر اورغریب کے درمیان خلیج کم کرنے کی جانب قدم بڑھایا ہے ۔2لاکھ طالب علموں کیلئے17ارب روپے کایہ فنڈ پاکستان کے مضبوط اور درخشاں مستقبل کیلئے’’ محفوظ سرمایہ کاری‘‘ کی حیثیت رکھتا ہے۔اس عظیم کارخیر کا خیال مجھے غریب الوطنی کے ایام میں آیا، 7سال پہلے 2ارب روپے سے شروع کیے جانے والے پیف سکالرشپ پروگرام کا اب حجم 17ارب روپے ہو گیا ہے اور اگر پاکستان کو دنیا کی عظیم مملکت بنانا ہے تو اسے 1700ارب روپے تک بڑھایا جانا چاہئے۔وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے کہا کہ مقام افسوس ہے کہ پاکستان کی اشرافیہ نے گذشتہ 70برسوں میں دھونس اور دھاندلی سے اپنی خوشحالی کی قیمت پر عوام کو بدحالی کا شکار کیا اور اس کے نتیجہ میں پاکستان کے عوام کی اکثریت غربت، محرومی، لاچاری اور بے روزگاری کا شکار ہوئی۔اس سے بڑا ظلم اورذیادتی اورقومی جرم کوئی اور ہونہیں سکتا۔انہوں نے کہا کہ غریب خاندانوں کے بچوں کو اعلی تعلیم دلانے کا خیال مجھے غریب الوطنی میں آیا جب میں اپنے خاندان کے ساتھ جدہ میں قیام پذیر تھا ۔پھر ایک موذی مرض میں مبتلا ہوا لیکن2003ء میں اللہ تعالیٰ کے فضل وکرم اوروالدین کے دعاؤں سے مجھے نئی زندگی ملی،پھر میں لندن آیا اور اس خواب کو اپنی آنکھوں میں بسا لیا۔اس وقت پاکستان پر ایک ڈکٹیٹر مشرف کی حکومت تھی جس نے سب سے پہلے پاکستان کا نعرہ تو ضرور لگایا لیکن اربوں روپے اپنی جیب میں ڈال لیے اورجب ڈکٹیٹر کے اکاؤنٹس کا راز سامنے آیا توانتہائی شرمندگی سے کہا کہ مجھے پیسے بادشاہ نے دےئے ہیں۔ ڈکٹیٹر جنرل پرویز مشرف کے دور میں پاکستان کاجو حال ہواسب کے سامنے ہے۔موصوف لوٹ مار کر کے ملک سے چلے گئے جب ان کے اکاؤنٹ سامنے آئے تو کہہ دیا کہ بادشاہ نے ان کی مدد کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ اشرافیہ نے اپنی تقدیر تو بدل لی لیکن قوم کی تقدیر نہیں بدلی جاسکی۔اشرافیہ نے بہت بڑا جرم کیا ہے ،اب اسے بدلنا ہوگا۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ پنجاب حکومت نے بہاولپور کے ریگستان میں سولر منصوبے شروع کیے ہیں اوراس وقت سولر منصوبوں سے چارسو میگاواٹ بجلی نیشنل گرڈ میں شامل ہورہی ہے۔پنجاب حکومت کے اس اقدام سے صحراہ میں بہار آئی ہے ۔ یہ منصوبے کئی برس قبل بھی شروع ہوسکتے تھے لیکن کسی کو خیال نہیں آیا ۔ماضی میں اس حوالے سے مجرمانہ غفلت برتی گئی۔انشاء اللہ 2017ء کے اختتام تک ملک میں اندھیرے نہیں ہوں گے بلکہ اجالا ہوگا۔انہوں نے کہاکہ ہم نے ماضی سے سبق سیکھ کر آگے بڑھنا ہے اوربعض عناصر کو ہوش کے ناخن لینے چاہیے۔انشاء اللہ ہم سب ملکر ملک کی تقدیر بدلیں گے۔قبل ازیں وائس چیئر مین پیف ڈاکٹر امجد ثاقب نے 7سال قبل شروع ہونیوالے پیف سکالر شپ پروگرام کی اہمیت اور اس کے تعلیمی نظام میں تعلیمی ترقی کے حوالے سے اظہار خیا ل کیا۔تقریب میں وزیرمملکت تعلیم وامور داخلہ بلیغ الرحمن، صوبائی وزیرامداد باہمی ملک محمد اقبال چنڑ،صوبائی وزیر تعلیم رانا مشہود احمد خان، سینیٹر چوہدری سعود مجید، ایم این اے علی حسن گیلانی،ایم این اے بیگم پروین مسعود بھٹی،سیکرٹری انفارمیشن پاکستان مسلم لیگ(ن) پنجاب سمیع اللہ چوہدری، وائس چیئر مین پنجاب ایجوکیشن انڈوومنٹ فنڈ ڈاکٹر امجد ثاقب، ایم پی اے فوزیہ ایوب قریشی،وائس چانسلر اسلامیہ یونیورسٹی ،کمشنر بہاول پورڈویژن ، میڈیااورسول سوسائٹی کے نمائندگان، طلباوطالبات، پیف سکالرز، اساتذہ اور والدین کی کثیر تعداد شریک تھی۔

شہبازشریف

لاہور(جنرل رپورٹر)وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ اسلام میں خصوصی افراد کی عزت و تکریم اور ان کا خیال رکھنے کا خصوصی طور پر حکم دیا گیا ہے۔ معاشرے میں خصوصی افراد کے حوالے سے سیاسی ، سماجی،معاشی اورثقافتی وقار کا شعوراورآگاہی پیدا کرن کی کی ضرورت ہے۔خصوصی افراد نے ہر شعبے میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا ہے اور محنت و لگن سے معذوری کو شکست دیکر معاشرے میں اپنا مقام بنایا ہے۔خصوصی افراد بھی نارمل افراد کی طرح ملک و قوم کی خدمت کے جذبے سے سرشار ہیں۔ وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے خصوصی افراد کے حقوق کے تحفظ کے عالمی دن کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ خصوصی افراد کے تحفظ حقوق کا عالمی دن منانے کا مقصد انہیں درپیش مسائل اجاگر کرنا ہے۔انہوں نے کہا کہ اگرخصوصی افراد کو آگے بڑھنے کے بہتر مواقع فراہم کئے جائیں تو وہ ملک کی تعمیر وترقی میں موثر کردارادا کرسکتے ہیں۔خصوصی افراد کی کفالت، نگہداشت اور انہیں مساوی ترقیاتی مواقع دینا کسی بھی معاشرے کے صحت مند ہونے کی دلیل ہوتی ہے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ذہنی و جسمانی طور پرخصوصی افراد دیگر معاشرے کی نسبت زیادہ توجہ کے مستحق ہوتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے خصوصی بچوں کی بحالی ،نگہداشت اورتعلیم و تربیت کے لیے متعددٹھوس اقدامات کیے ہیں اور خصوصی افراد کی بہتر نگہداشت اوربحالی کیلئے تمام تر وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں۔ خصوصی بچوں کی بحالی کے اداروں میں تعلیم و تربیت کی سہولتوں کو بہتر بنایا گیا ہے۔صوبے میں خصوصی افراد کے لیے نوکریوں میں خصوصی کوٹہ بھی متعین ہے ۔وزیر اعلی نے کہا کہ خصوصی افراد کو معاشرے میں ان کاجائزحق اور با وقار مقام دلانے کیلئے معاشرے کے ہر طبقے کو اپنا کردارادا کرنا ہے۔انہوں نے کہا کہ سپیشل بچے خصوصی صلاحیتوں کے مالک ہوتے ہیں،اگر اساتذہ ان کی صلاحیتوں کو بہتر طریقے سے اجاگر کریں گے تو یہ معاشرے کی بہتری کے لئے موثر کردار ادا کرسکتے ہیں۔ آج کا دن ہمیں اس عزم کا اعادہ کرنا ہے کہ خصوصی افراد کی بحالی ، ان کو معاشرے کا مفید رکن بنانے کے حوالے سے اپنا بھر پور کردار ادا کریں گے۔

پیغام

مزید : صفحہ اول


loading...