صوبے کے حقوق غضب کرنے کی اجازت نہیں دی جائیگی ،حیدر ہوتی

صوبے کے حقوق غضب کرنے کی اجازت نہیں دی جائیگی ،حیدر ہوتی

بخشالی ( نمائندہ پاکستان) عوامی نیشنل پارٹی کا ساولڈھیر میں سیاسی قوت کا مظاہرہ، مختلف سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے سینکڑوں کارکنان اے این پی میں شامل ، سابق وزیر اعلیٰ امیر حیدر ہوتی و ضلعی ناظم حمایت اللہ مایار کا جلسہ عام سے خطاب، تفصیلات کے مطابق عوامی نیشنل پارٹی نے سابق ناظم شہید گل حمید خٹک کے حجرہ ساولڈھیر میں سیاسی قوت کا مظاہرہ کیا، جلسہ عام میں کارکنان کی کثیر تعداد میں شرکت کی، سابق وزیر اعلیٰ امیر حیدر ہوتی نے اے این پی میں شمولیت اختیار کرنے والے افراد کو سُرخ ٹوپیاں پہنائیں، جلسہ عام سے سابق وزیر اعلیٰ امیر حیدر ہوتی، ضلع ناظم حمایت اللہ مایار، تحصیل کونسلر شوکت حمید خٹک نے خطاب کیا، جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے سابق وزیرا علیٰ و اے این پی کے صوبائی امیر حیدر ہوتی نے کہا کہ اے این پی پاک چین راہداری منصوبے کے مخالف نہیں لیکن ہم چاہتے ہیں کہ راہداری منصوبے میں ہر صوبے کو اس کا حق ملے ٗپنجاب ٗ سندھ اور بلوچستان کو اپنا جائز حق ملنا ہے لیکن خیبر پختونخوا کے حقوق پر ڈاکہ نہیں ڈالنے دیں گے، ان کا کہنا تھا کہ جس وقت پاک چین راہداری منصوبے کی پر کام ہو رہا تھا تو پنجاب کے وزیر اعلی ٰ شہباز شریف نے ذاتی دلچسپی لیتے ہوئے اپنے صوبے کو اسکا حق دلوایا لیکن بد قسمتی ہمارے صوبے کے وزیراعلی ٰ پرویز خٹک اس وقت اسلام آباد میں دھرنے میں رقص کررہے تھے، سابق وزیر اعلیٰ امیر حیدر ہوتی کا مزید کہنا کہ عمران خان ہمارے منصوبوں کا دوبارہ افتتاح کرکے عوام کو بے وقوف بنانے کی ناکام کوشش کررہے ہیں ٗ آج وزیراعلیٰ پرویز خٹک نے سوات کالام میں جس منصوبے کا افتتاح کیا ہے اس کا افتتاح میں اپنے دور حکومت میں کرچکا ہوں ، عمران خان کی تمام توجہ پنجاب پر مرکوز ہیں ٗ یہی وجہ ہے کہ تبدیلی کے نام پر بننے والی حکومت چار سال میں عوام کو ایک بھی بڑا منصوبہ دینے میں نام رہی ہے، امیر حیدر ہوتی کا کہنا تھا کہ میں فخر سے کہتا ہوں کہ اپنے دور حکومت میں مسجدوں کی تعمیر کیلئے فنڈ جاری کئے تھے اور اگر دوبارہ خدمت کا موقع ملا تو آئندہ بھی اللہ کے گھروں کی خدمت کرنے سے گریز نہیں کروں گا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ اول


loading...