مقبوضہ کشمیر ،کانگریس کے مقامی سرپنچ کو بھارتی فورسز نے جعلی مقابلے میں پار کر دیا

مقبوضہ کشمیر ،کانگریس کے مقامی سرپنچ کو بھارتی فورسز نے جعلی مقابلے میں پار ...

سرینگر(اے این این) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے کانگریس کے مقامی سرپنچ کو جعلی مقابلے میں پار کر دیا،سجاد ملک کو 20روز قبل مجاہدین سے تعلق کے الزام گرفتار کیا گیا تھا۔ مقامی لوگوں کے مطابق وادی میں موجودہ ایجی ٹیشن کے دوران پتھراؤ میں ملوث قرار دیکر پولیس نے قریب بیس روز قبل سجاد احمد ملک عرف بٹہ ملک ولد محمد عبداللہ ساکن بٹہ گنڈ کو گرفتار کیا۔ جسے جعلی مقابلے میں گولی مار دی گئی ہے ۔ بھارتی فوج کے مطابق جمعرات کو سجاد نے طبعیت ٹھیک نہ ہونے کی شکایت کی جس کے بعد اسے اسپتال لے جایا گیا تاہم رات گئے ایک ایس پی او کا اسلحہ چھین کر ایک سکوٹرپر آگنو کی طرف چلا گیا ۔ بعد میں آگنو میں مختصر جھڑپ ہوئی جس میں مذکورہ نوجوان مارا گیا۔مقامی لوگوں اور مزکورہ ہسپتال کے عملے نے فورسز کے الزام کی تردید کی ہے ،ہسپتال حکام کے مطابق وہاں اسلحہ چھین کر بھاگنے کا کوئی وقعہ نہیں ہوا،فورسز حالت بہتر ہونے پر سجاد کو ساتھ لے کر گئی تھیں ۔بٹہ ملک کے بارے میں بتایا جارہا ہے کہ وہ کانگریس پارٹی کا سرپنچ ہے اور اس نے کئی بار جیل بھی کاٹی تھی۔ وہ سی آر پی ایف میں کام کرتا تھا لیکن بعد میں اس نے نوکری چھوڑ دی۔اسکے بعد پولیس نے اسے مجاہدین کیساتھ رابطے رکھنے کی پاداش میں گرفتار کیا تھا اور وہ تین بار ان الزامات پر گرفتار بھی ہوئے ۔اسکے بعد سجاد نے کانگریس پارٹی میں شمولیت اختیار کی اور سرپنچ بن گئے۔سجاد ملک کی ہلاکت کے حوالے سے پولیس نے کچھ نہیں بتایا۔

مقبوضہ کشمیر

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...