بھارت میں کرنسی تبدیل کرانے کے لیے قطار میں انتظار کرنے والی خاتون نے بچے کو جنم دے دیا

بھارت میں کرنسی تبدیل کرانے کے لیے قطار میں انتظار کرنے والی خاتون نے بچے کو ...
بھارت میں کرنسی تبدیل کرانے کے لیے قطار میں انتظار کرنے والی خاتون نے بچے کو جنم دے دیا

  


نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک )مودی سرکار کی غلط پالیسیوں سے بھارت بری طرح کرنسی بحران سے شکار ہے جس کے باعث لوگوں کو معمول کی زندگی بری طرح متاثر ہے ،کرنسی کی تبدیلی کے لیے لائینوں میں لگے کچھ لوگ اپنے پیاروں کے علاج کے لیے خوار ہو رہے ہیں تو کچھ خود سخت بیماری کی حالت میں لمبی لمبی لائینوں میں دھکے کھا رہے ہیں ،بعض لوگ تو اپنے پیاروں کی آخری رسو مات ادا کرنے کے لیے پیسے نہ ہونے پر بھی لائنوں میں لگے رہے تاکہ اپنے پیاروں کی آخری رسومات ادا کر سکیں ۔ایسی ہی صورتحال کانپور میں پیش آئی جہاں کرنسی تبدیل کرانے کے لیے لمبی قطار میں انتظار کرنے والی حاملہ خاتون نے بچے کو جنم دے دیا ۔

ہندوستانی بحریہ کے سربراہ 14روز بعد ’’خواب غفلت‘‘سے بیدار ہوتے ہی پاکستان کے ہاتھوں ذلت آمیز پسپائی بھول گئے،اچانک آنکھ ’’کھلنے ‘‘ پرپاکستانی دعویٰ مسترد کر دیا

ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق بھارتی ضلع کانپور کے علاقے جھن جھک کے ایک بینک میں کرنسی تبدیل کرانے کے لیے قطار میں لگی ہوئی حاملہ خاتون نے بچے کو جنم دے دیا ۔بھارتی علاقے سردار پور کی رہائشی سرویشا دیوی نے بینک کی حدود میں بچے کو جنم دیا تو وہاں موجود دیگر خواتین نے ان کی مدد کی ۔پھر بینک انتظامیہ نے پولیس کو اطلاع کی جس پر سرویشا دیوی کو نو مولود بچے سمیت کمیونٹی ہیلتھ سنٹر منتقل کیا گیا ۔بینک حکام نے کہا کہ قطار میں کھڑی سرویشا دیوی کو جب درد شرو ع ہوئی تو ایمبو لینس کو بلایا گیا لیکن اس کے آنے سے پہلے سرویشا دیوی کی تکلیف بہت زیادہ بڑھ گئی تھی جس پر وہاں موجود دیگر خواتین نے سرویشا دیوی کو گھیرے میں لے کر ان کی مدد کی اوربینک کے احاطے میں ہی بچے کو جنم دینے میں سرویشا دیوی کی مدد کی۔بعد ازاں ماں اور بچے کو ہسپتال منتقل کردیا گیا جہاں ڈاکٹروں کے مطابق دونوں کی حالت خطرے سے باہر ہے ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...