ہارٹ آف ایشیا کانفرنس سے قبل بھارت کی بھونڈی سازش ناکام ،برہان وانی شہید اور حافظ سعید کی مبینہ’’ ٹیلی فونک گفتگو ‘‘کی آڈیو جاری کر دی

ہارٹ آف ایشیا کانفرنس سے قبل بھارت کی بھونڈی سازش ناکام ،برہان وانی شہید ...
ہارٹ آف ایشیا کانفرنس سے قبل بھارت کی بھونڈی سازش ناکام ،برہان وانی شہید اور حافظ سعید کی مبینہ’’ ٹیلی فونک گفتگو ‘‘کی آڈیو جاری کر دی

  


نئی دہلی( خالد شہزاد فاروقی)بھارت کی مودی سرکار نے تحریک آزادی کشمیر اور پاکستان کیخلاف پروپیگنڈا کیلئے بھونڈی سازش تیار کرتے ہوئے’ ’ ہارٹ آف ایشیا کانفرنس ‘‘شروع ہونے سے ایک روز قبل شہید کشمیری کمانڈر برہان وانی اور جماعۃالدعوۃ کے سربراہ حافظ محمد سعید کی ٹیلیفونک گفتگو کی آڈیو جاری کر دی،بھارتی میڈیا خصوصا زی نیو ز ، این ڈی ٹی وی ،اے بی پی نیوز ،انڈیا ٹی وی ، ٹائمز آف انڈیا سمیت دیگر ٹی وی چینلز  کمانڈر برہان وانی شہید  اور حافظ سعید کی مبینہ ٹیلی فونک گفتگو کو بنیاد بنا کر  پاکستان کے خلاف زہر اگلنے لگا ، دوسری طرف غیر جانبدارمبصرین کا کہنا ہے کہ گفتگو میں برہان وانی کا حافظ محمد سعید سے مدد طلب کرنے سے ثابت ہوتا ہے  کہ کشمیریوں کی آزادی کی تحریک ان کی اپنی ہے اور وہ مسئلہ کشمیربین الاقوامی سطح پر اجاگر کرنے کیلئے پاکستان اور یہاں (بھارت) کی تنظیموں سے بھی مدد چاہتے ہیں۔ مودی سرکار اس مبینہ ٹیلیفونک گفتگو  کو  ہارٹ آف ایشیا کانفرنس سے قبل پاکستان اور جماعۃالدعوۃ  کے خلاف استعمال کرنا چاہتی تھی لیکن اس کی یہ بھونڈی کوشش اس کے اپنے گلے پڑ گئی ہے ۔

انڈین میڈیا کے مطابق کشمیری ہیرو برہان وانی اور حافظ محمد سعید کے درمیان مبینہ  ٹیلیفونک گفتگو اس وقت بھارتی میڈیا میں ہاٹ ایشو ہے اور ہندوستانی ٹی وی چینلز ، ویب سائٹس اور دیگر ذرائع ابلاغ یہ ایشو کھڑا کرنے کی کوشش کر رہے ہیں کہ برہان وانی نے جماعۃالدعوۃ کے امیر سے کشمیریوں کیلئے مدد مانگی ہے جس سے ثابت ہوتا ہے کہ اس تحریک کے پیچھے پاکستان اور حافظ محمد سعید کی تنظیم ہے تاہم وہ اپنے اس پروپیگنڈا میں مکمل طور پر ناکام رہا ہے ۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق مشیر خارجہ پاکستان سینیٹر سرتاج عزیز   چونکہ  ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں شرکت کے لئے  بھارتی شہر امرتسر پہنچ چکے ہیں  اس لئے ان کی ہندوستان آمد سے ایک دن قبل 5  ماہ پرانی اس گفتگو کو منظم منصوبہ بندی کے تحت جاری کیا گیا تھا جسے بنیاد بنا کر بھارتی میڈیا پاکستان کے خلاف زہر اگل رہا ہے۔

 بعض غیر جانبدار  مبصرین کا کہنا ہے کہ اس آڈیو ریکارڈنگ کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے اور نہ ہی یہ کوئی نئی بات ہے ،حافظ محمد سعید چونکہ پاکستان میں کشمیریوں کی سب سے مضبوط آواز ہیں اور اس حوالہ سے بھرپور جدوجہد جاری رکھے ہوئے ہیں اس لئے ان کا تمام کشمیری حریت لیڈروں اور جماعتوں سے رابطہ رہتا ہے اورانہوں نے کبھی ان رابطوں سے انکار نہیں کیاہے۔واضح رہے کہ  ہندوستان میں پاکستانی ہائی کمشنر  عبد الباسط بھی حریت قائدین کو نئی دہلی بلوا کر ان سے ملاقاتیں اور پاک بھارت مذاکرات و دیگر موضوعات پر مشاورت کرتے رہتے ہیں جبکہ پاکستانی حکومت اور وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف نے بھی واضح اور دو ٹوک الفاظ میں کشمیریوں کی اخلاقی اور سفارتی حمائیت کا نہ صرف  اعلان کیا ہوا ہے بلکہ عملی طور پر سفارتی کوششوں میں بھی تیزی لائی گئی ہے،جبکہ بھارت سے مذاکرات میں بھی مسئلہ  کشمیر کو ہی مشروط رکھا گیا ہے ۔ 

دوسری طرف بھارتی میڈیا کے مطابق سابق پاکستانی صدر  اور پاک فوج کے سابق سربراہ جنرل(ر) پرویز مشرف نے برہان وانی اور حافظ محمد سعید کے مابین ٹیلیفونک گفتگو پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ کوئی نئی یا حیرت کی بات نہیں ہے،برہان وانی کشمیری قوم کے ہیرو ہیں اور حافظ محمد سعید کی تنظیم پاکستان کی سب سے بہترین این جی او ہے جس نے زلزلہ، سیلاب اور دیگر قدرتی آفات کے موقع پر ہمیشہ سب سے بڑھ چڑھ کر امدادی سرگرمیاں میں حصہ لیا ہے ،حافظ محمد سعید کا موقف درست ہے ،کشمیریوں کی مدد ہر پاکستانی اپنا فریضہ سمجھتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ میں پاکستان کا صدر ہوتا تو حافظ محمد سعید اور جماعۃالدعوۃ کا مقدمہ اقوام متحدہ میں لڑتا۔

مزید : بین الاقوامی


loading...