خسارہ کم کرنے کیلئے ،لیگی دور حکومت میں ریلوے کی ہزاروں ایکٹراراضی لیز پر دینے کا انکشاف

خسارہ کم کرنے کیلئے ،لیگی دور حکومت میں ریلوے کی ہزاروں ایکٹراراضی لیز پر ...

  

ملتان (سٹاف رپورٹر ) مسلم لیگ (ن) کی حکومت کے دور میں پاکستان ریلوے کا خسارہ کم کرنے کیلئے ریلوے کی ہزاروں ایکڑ اراضی لیز پر دئیے جانے کا انکشاف ہوا ہے ۔ذرائع کے مطابق پاکستان ریلوے کے 8ڈویژنوں کی جانب سے 3سال کے دوران 5ہزار 520ایکڑ سے زائد اراضی لیز پر دی گئی جس سے ادارے کو 4ارب 76کروڑ روپے کی آمدن حاصل ہوئی ۔ سب سے زیادہ اراضی ریلوے ملتان ڈویژن نے لیز پر دی جو3ہزار 61ایکڑ پر (بقیہ 29نمبرصفحہ7پر )

مشتمل تھی ۔2015کے دوران 8ڈویژنوں میں ایک ہزار590ایکڑ اراضی لیز پر دی گئی جس میں ملتان ڈویژن نے 912ایکڑ پشاور ڈویژن نے 277ایکڑ سے زائد ‘ راولپنڈی ڈویژن نے 253 ایکڑ‘ لاہور ڈویژن نے 428ایکڑ ‘سکھر ڈویژن نے 342ایکڑ‘کراچی ڈویژن نے سوا 5ایکڑ سے زائد‘کوئٹہ ڈویژن نے 107ایکڑ اور مغلپورپورہ لاہور ڈویژن نے0.319ایکڑ اراضی لیز پر دی جبکہ اس مد میں 2015کے دوران ریلوے کو ایک ارب 59کروڑ روپے کی آمدن حاصل ہوئی ۔ 2016میں ریلوے کی مزید ایک ہزار 432ایکڑسے زائد اراضی لیز پر دی گئی جس میں ملتان ڈویژن نے913ایکڑ سے زائد‘ پشاور ڈویژن نے 81ایکڑ سے زائد ‘ راولپنڈی ڈویژن نے76ایکڑ‘ لاہور ڈویژن نے 151ایکڑ ‘سکھرڈویژن نے 204ایکڑ‘ کراچی ڈویژن نے سوا ڈھائی ایکڑ سے زائد‘ کوئٹہ ڈویژن نے پونے 3ایکڑاور مغلپورہ لاہور ڈویژن نے 0.136ایکڑ اراضی لیز پر دی جبکہ اس میں میں 2016کے دوران ریلوے کو ایک ارب 53کروڑروپے سے زائد آمدن حاصل ہوئی ۔2017میں ریلوے کی مزید ایک ہزار 763ایکڑ سے زائد اراضی لیز پر دی گئی جس میں ملتان ڈویژن نے ایک ہزار 235ایکڑ سے زائد‘ پشاور ڈویژن نے تقریباً 5ایکڑ‘ راولپنڈی ڈویژن نے56ایکڑ زائد ‘ لاہور ڈویژن نے 291ایکڑسے زائد ‘سکھر ڈویژن نے 174ایکڑ سے زائد جبکہ مغلپورہ لاہور ڈویژن نے 0.380ایکڑ اراضی لیز پر دی جبکہ اس مد میں 2017کے دوران ریلوے کو ڈیڑھ ارب 63کروڑ26لاکھ روپے سے زائد آمدن حاصل ہوئی ۔ ریکارڈ کے مطابق ملتان ڈویژن نے مجموعی طور3ہزار 61ایکڑ‘ پشاور ڈویژن نے مجموعی طور پر 363ایکڑ‘ راولپنڈی ڈویژن نے 385ایکڑ سے زائد ‘ لاہور ڈویژن نے 872ایکڑ سے زائد ‘ سکھر ڈویژن نے 720ایکڑ سے زائد‘ کراچی ڈویژن نے تقریباً8ایکڑ‘ کوئٹہ ڈویژن نے 109ایکڑ سے زائد اراضی لیز پر دی مجموعی طور پر 5ہزار 520ایکڑ اراضی لیز پر دی گئی ۔

ریلوے خسارہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -