اتوار بازاروں میں مہنگائی کا راج ،صارفین ریلیف سے محروم

اتوار بازاروں میں مہنگائی کا راج ،صارفین ریلیف سے محروم

لاہور(اپنے نمائندے سے) حکومتی 100 روز پورے ہو گئے لیکن شہریوں کو سبزیاں و پھل پہلے سے بھی مہنگے ملنے لگے۔ گزشتہ 100روز میں پھلوں میں 58روپے فی کلو جبکہ سبزیوں میں 17 روپے فی کلو جبکہ مرغی گوشت کی سرکاری قیمت میں 70 روپے فی کلو کا اضافہ دیکھا گیا۔ پھلوں میں انگور کی قیمت 116 روپے سے بڑھ کر 174 روپے ہو گئی، اسطرح انار 133 کی بجائے 190 روپے، مسمی 68 کی بجائے 90 روپے جبکہ سبزیوں میں ادرک 115 کی بجائے 130 روپے ہو گیا ۔ اس طرح برینڈڈ اشیاء سمیت مصالحہ جات کی فروخت بھی اضافی قیمتوں پر جاری ہے۔اتوار بازار میں سبزیوں کی قیمتیں گاجر25، مٹر 35روپے، چقندر 50روپے، شلجم 18، مولی 14، ادرک چائینہ 155، لہسن چائنہ 85، لہسن دہی 60، ٹماٹر 28، ادرک تھائی لینڈ 115، آلو نیا 18 روپے، ٹماٹر 28، بند گوبھی 15، مٹر 35، کھیرا 28، شلجم 18، چقندر 50، سبز پیاز پاؤ40روپے، برائلر زندہ 184 روپے ، برائلر گوشت 265روپے کلو کے حساب سے فروخت ہوا ، اتوار بازار میں کیلا 45روپے درجن ،انار قندھاری 140، فروٹر 70، مسمی فی درجن 80، گرے فروٹ 15روپے ، سیب کالا کولو120،شکر قندی 50 روپے، شہریوں کا کہنا تھا کہ سستا اتوار بازار صرف نام کا رہ گیا، متعلقہ اداروں کو اتوار بازار میں سبزیوں کی قیمتوں میں کمی کرنی چاہیے، مہنگائی کی گاڑی بدستور چلتی جا رہی ہے اور غریب عوام پستے جا رہے ہیں۔ لوگوں کا کہنا تھا کہ اب مہنگائی ہے تو کیا کریں جینے کے لئے اشیا خورونوش بھی ضروری ہیں۔

عوام کا مزید کہنا تھاکہ کوئی جیے یا مرے حکومت کو کیا ان کی اپنی گاڑی تو چل رہی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1