سرائیکی تحریک کسی جماعت کی بی ٹیم اورنہ ہی دُم چھلہ ‘ ظہور دھریجہ

سرائیکی تحریک کسی جماعت کی بی ٹیم اورنہ ہی دُم چھلہ ‘ ظہور دھریجہ

  

ملتان(سٹی رپورٹر) سرائیکستان قومی کونسل کے صدر ظہور دھریجہ نے کہا کہ صدر عارف علوی آج کہہ رہے ہیں کہ سرائیکی صوبہ میں مشکلات ہیں کہ صوبوں کے اثاثہ جات کی تقسیم کے مسائل درپیش ہونگے۔ سوال یہ ہے کہ کیا ان مشکلات کا ان کو الیکشن کے وقت علم نہ تھا ؟ اس وقت تو سب کی زبان پر (بقیہ نمبر33صفحہ12پر )

تھا کہ ہم سو دن میں صوبہ بنائیں گے ۔ اب سو دن کا وعدہ کہاں گیا؟ انہوں نے کہا کہ آصف زرداری کی طرف سے سرائیکی اجرک کی شناخت کو زیب تن کرنا خوش آئند ہے لیکن وسیب کے لوگوں کو خوشی اس وقت ہوگی جب وہ سرائیکی وسیب کی شناخت کو تسلیم کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کی تنظیم کا نام جنوبی پنجاب کی بجائے سرائیکی وسیب رکھیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ صوبہ سرائیکستان وسیب کے لوگوں کا حق ہے ‘ انہوں نے کہا کہ سرائیکی تحریک کے جو دوست ایک ہی وقت میں اقتدار پرست جماعتوں اور سرائیکی جماعتوں کے ساتھ بھی جڑے ہوئے ہیں ، ان کو دونوں میں سے ایک کا انتخاب کرنا ہوگا ۔ہم واضح کرتے ہیں کہ سرائیکی تحریک نہ تو کسی جماعت کی بی ٹیم ہے اور نہ ہی دم چھلا ۔ سرائیکی تحریک کی اپنی الگ ایک پہچان ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم تحریک انصاف کی اس قیادت پر عدم اعتماد کا اظہار کرتے ہیں جنہوں نے صوبے کے نام پر ووٹ لئے اور آج وزارتیں اور عہدے لیکر سرائیکی صوبے کا نام لینا تک گورا نہیں کرتے ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -