منی لانڈرنگ جلد قانون سازی ، پی پی رہنما زرداری کی کرپشن چھپانے کیلئے عمران خان پر تنقید کررہے ہیں ، شاہ محمود قریشی

منی لانڈرنگ جلد قانون سازی ، پی پی رہنما زرداری کی کرپشن چھپانے کیلئے عمران ...

ملتان(سپیشل رپورٹر )وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پی پی رہنما زرداری کی کرپشن چھپانے کیلئے وزیراعظم عمران خان پر تنقید کررہے ہیں۔ قوم جانتی ہے پی پی قیادت (بقیہ نمبر25صفحہ12پر )

نے دورہ اقتدار میں ملک کو مضبوط کیا یا اپنے آپ کو مضبوط کیا ۔احتساب کا وقت آیا ہے تو تحریک انصاف پر تنقیدیاد آگئی۔ منی لانڈرنگ پر جلد ہی قانون سازی کی جائیگی۔ جس کے بعد بیرون ملک جائیدادیں خریدنے اور قومی دولت غیر قانونی طور پر منتقل کرنے والوں پر ہاتھ ڈالا جائے گا۔ ملکی تاریخ میں پہلی دفعہ ہوا ہے کہ بڑے بڑے لٹیروں پر ہاتھ ڈالا گیا۔ جن لوگوں نے ملکی خزانہ لوٹا اورقومی وسائل کا بے دردی سے استعمال کیا ان کا احتساب ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے یونین کونسل 42میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا عمران خان کی قیادت میں مضبوط ، گرین اور خوشحال پاکستان بنانا چاہتے ہیں۔ حکومتی پالیسیوں کے دور رس اثرات مرتب ہونگے اور عوام کوخوشگوار تبدیلی محسوس ہوگی۔ حکومت نے پہلے 100دنوں کا ایجنڈا سمت درست رکھنے کیلئے قائم کیا تھا۔ 100روز گزرنے کے بعد وزراء کی کارکردگی رپورٹس سے پتہ چلا حکومت صحیح رستے پر چل رہی ہے۔ ہر سیاسی جماعت انتخابات سے پہلے اپنا منشور بناتی ہے اور بعد میں منشور سے ہٹ جاتی ہے ہم نے اپنے منشور کو عملی جامعہ پہنانے کیلئے 100دن کا ٹائم فریم رکھا تھا۔گڈگورننس کیلئے ہر شعبے میں ریفارمز پیش کریں گے ۔ عوام نے ہمیں مینڈیٹ دیا ہے ۔عوامی مینڈیٹ کا احترام کریں گے۔ بنائی گئی پالیسیوں پر پانچ سال ایمانداری سے عمل کریں گے۔ سابقہ حکومت نے پانچ سال تک وزیر خارجہ کا تقرر نہ کرکے ملک دشمنی کی۔وزارت خارجہ کو چیلنج سمجھ کر قبول کیا ہے۔ پاکستان کی خارجہ پالیسی کو مزید فعال کرنے کیلئے علاقائی اور عالمی سطح پر بھرپور سفارتی رابطوں کو شروع کردیا گیا ہے۔ پاکستان کی خارجہ پالیسی کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے اور سفارتی ماہرین کے تجربات سے مستفید ہونے کیلئے مشاورتی اجلاس منعقد کریں گے ۔جس میں سینئر سفارت کاروں اور سفارتی ماہرین کی طرف سے آنے والی تجاویز کو اہمیت دی جائیگی اور خارجہ پالیسی کا بغور جائزہ لیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ و زارت خارجہ نے اپنی100 روزہ کارکردگی کی رپورٹ جاری کردی ہے۔ اس رپورٹ میں وزیراعظم پاکستان عمران خان اور وزیر خارجہ کے سرکاری ، بیرون ملک دوروں اور ان کے نتیجے میں حاصل ہونے والی کامیابیوں کی مکمل تفصیلات بیان کی گئیں ہیں۔ اس رپورٹ میں پاکستان کا دورہ کرنے والی اہم شخصیات اور غیر ملکی وفود کی تفصیلات بھی بیان کی گئی ہیں اور پہلے 100 روز کے درمیان وزارت خارجہ کی سفارتی کامیابیوں کا بھی ذکر کیا گیا ہے۔ حکومت کے100روزہ ایجنڈے میں وزارت خارجہ کی کارکردگی نمایا ں رہی ہے جس کو وزیراعظم عمران خان اور وفاقی کابینہ نے سراہا ہے۔ قبل ازیں وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے ملتان میں مصروف دن گزارا ۔ انہوں نے یونین کونسل 26 کا دورہ کیا جہاں انہوں نے زوار بھٹی کی دادی کی وفات پر فاتحہ اور حنیف خان کے بھائی کی وفات پر فاتحہ پڑھی اور معززین علاقہ سے ملاقات کی۔ انہوں نے یونین کونسل 49 کا دورہ کیا جہاں جنرل کونسلر وسیم کے والد کے انتقال پر تعزیت کی اور معززین علاقہ سے ملاقات کی۔ یونین کونسل 22کے دورہ کیا جہاں یوسی 22کے ٹکٹ ہولڈر و چیئرمین امین انصاری کی رہائش گاہ پر گئے اہل علاقہ سے ملاقات کی ا ور یونین کونسل کے مسائل پر بات چیت کی اور حل کیلئے احکامات جاری کئے۔ یوسی 15 ٹکٹ ہولڈر و چیئرمین فیاض بلوچ کی رہائش گاہ Yبلاک شاہ رکن عالم پر گئے جہاں استقبالیہ تقریب میں شرکت کی ۔ اس موقع پر تحریک انصاف کے کارکنوں کی کثیر تعداد موجود تھی۔ وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی این اے 157 قادر پور راں میں سینئر صحافی ظفر آہیر کی رہائش گاہ پر گئے اور ان کی والدہ کی وفات پر اظہار تعزیت کی اور مرحومہ کے درجات کی بلندی کیلئے دعا کی ۔ رکن صوبائی اسمبلی ملک مظہر عباس راں ۔سابق چیئرمین مارکیٹ کمیٹی ملک نسیم راں ۔ چیئرمین پی ایچ اے اعجاز جنجوعہ سمیت آہیر خاندان کی ایک بہت بڑی تعداد اس موقع پر موجود تھی۔وزیر خارجہ نے قادر پور راں میں اشرف گجر کے بھائی کی شادی میں شرکت کی۔علاوہ ازیں وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر اپنے ٹویٹ میں کہا ہے میرے بیان کو سکھ برادری کے جذبات سے منسوب کرنا انتہائی گمراہ کن اور بدنیتی پر مبنی کوشش ہے ۔میں نے صرف بھارت کے ساتھ دوطرفہ تعلقات پر بات کی تھی۔سکھ برادری کے جذبات کا مکمل احترام کرتے ہیں۔کرتارپور کاریڈور کھولنے کا فیصلہ سکھ برادری کی خواہشات کے تحت کیا گیا۔کرتارپور کوریڈور کا تاریخی اقدام خلوص نیت کے تحت کیا گیا۔پاکستان خلوص نیت کے تحت اس اقدام کو آگے بڑھائے گا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر