بھارت پاکستان کے ساتھ مذاکرات کے ذریعے مسئلہ کشمیر حل کرے،کفیل بخاری

بھارت پاکستان کے ساتھ مذاکرات کے ذریعے مسئلہ کشمیر حل کرے،کفیل بخاری

لاہور (سٹی رپورٹر) مجلس احرار اسلام پاکستان کے نائب صدر سید محمد کفیل بخاری نے ایوان احرارنیومسلم ٹاؤن لاہورمیں احرارکارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ کرتارپور سرحد کھولنا کوئی ایشو نہیں، ایشو یہ ہے کہ اس اقدام سے پاکستان کیا نفع حاصل کرسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور ہندوستان کے درمیان پرامن تعلقات قائم ہونا دونوں ملکوں کے لئے انتہائی ضروری ہیں، بھارت اپنی متشددانہ پالیسی ترک کرے اور ورکنگ باونڈری پر پاکستان کے خلاف جارحانہ کارروائیاں بند کرے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت پاکستان کے ساتھ مذاکرات کے ذریعے مسئلہ کشمیر حل کرے۔ انہوں نے کہاکہ اصل مسلہ قیام امن ہے ۔دونوں ملکوں میں امن قائم ہو اور برابری کی بنیاد پر تعلقات مستحکم ہوں تو کشمیر سمیت دیگر باڈرزکھولنے میں بھی کوئی مضائقہ نہیں۔ انہوں نے کہاکہ قادیانی پہلے واہگہ باڈر سے قادیان جاتے تھے اب کرتار پور سے جائیں گے، سکھ ہمیشہ ست پاکستان آ رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ بھارت قادیانیوں کو ویزا دیتا ہے لیکن دیگر پاکستانیوں کے لئے ویزا پالیسی مختلف ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارت کا یہ دہرا معیار غلط ہے۔

کفیل بخاری

مزید : میٹروپولیٹن 1