ضلع کرم کی رہائشی خاتون اپنی حفاظت کی بھیک مانگنے پشاور پہنچ گئی

ضلع کرم کی رہائشی خاتون اپنی حفاظت کی بھیک مانگنے پشاور پہنچ گئی

پشاور (سٹی رپورٹر) ضلع کرم کی رہائشی خاتون بی بی زاہدہ اپنی جان اور بچوں کی حفاظت کی بھیک مانگنے کیلئے پشاور پہنچ گئی، زاہدہ کے مطابق مبینہ طور پر دیور ااور ان کی ساتھیوں نے پہلے اس کے خاوند کو پیسوں کے عرض سے قتل کیابعد ازاں ان پر اس کی چار سالہ بیٹی سلمیٰ بی بی پر تیل چھڑک کر آگ لگادی اور اب بچوں سمیت جان سے مارنے کی دھمکی بھی دی جاتی ہیں پشاور پریس کلب میں رونا روتی ہوئی بی بی زاہدہ نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے الزام لگایاکہ کچھ عرصہ قبل پیسوں کی عرض اس کی مبینہ طور پراس کے خاوند کو اپنے بھائیوں نے قتل کیا اورمقتول کی بیوی کی آواز کو دبانے کیلئے اس کی دیور تاج گل نے اس کے ساتھ نکاخ کرنا چاہا انہوں الزام لگایا کہ میں نے اس سے نکاخ کرنے سے انکار کیا اورانہوں نے محمد عالم، جمیل، گلاب خان، سخی مرجان، اور دیگر ساتھیوں سمیت مجھے اپنے چار سالہ بیٹی سلمیٰ سمیت پیٹرول چھڑک کر آگ لگا دی جس کی وجہ سے میری اور بیٹی کی جسم مکمل طور پر جھلس گئے انہوں نے کہا کہ اس واقعہ کے بعد ہمیں علاقے عمائدین اور حکومت کے زور پر علاج معالجے کیلئے ہسپتال لائے گئے اور ملزمان کو مقامی انتظامیہ نے گرفتار کرلیا لیکن مقامی انتظامیہ نے پیسوں کی لالچ کے بنا پر ان کو رہا کیانہوں نے کہا کہ ہم تین مہینوں تک ایل آر ایچ پشاور میں زیر علاج تھیں اور اب کسی کو اپنے چہرے دیکھانے کے قابل نہیں رہے لیکن ہمارے بارے میں کسی نے نہیں پوچھا انہوں نے کہا کہ کہ مجرمان آزاد پھر رہے ہیں اوراب وہ ہمیں جان سے مارنے کی دھمکی دیتے ہیں انہوں نے وزیر اعظم عمران خان، چیف جسٹس آف پاکستان،وزیر مملکت برائے داخلہ امور شہریارآفریدی، گورنر خیبرپختونخوا،آئی جی پولیس اور دیگر متعلقہ حکام سے اپنے تین بچوں کی حفاظت اور ملزمان کے خلاف سخت کاروائی کرنے کا مطالبہ کیاہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول