محکمہ ٹرانسپورٹ کا زیادہ دھواں چھوڑنیوالے ان فٹ گاڑیوں کیخلاف کاروائی کا فیصلہ

محکمہ ٹرانسپورٹ کا زیادہ دھواں چھوڑنیوالے ان فٹ گاڑیوں کیخلاف کاروائی کا ...

  

کرک (بیورورپورٹ)محکمہ ٹرانسپورٹ کا زیادہ دھواں چھوڑنیوالے اَن فٹ گاڑیوں کیخلاف کارروائی کرنیکا فیصلہ‘ انڈس ہائیوے پر چلائے جانیوالے137گاڑیوں کو اَن فٹ قراردیدیا‘تفصیلات کے مطابق محکمہ ٹرانسپورٹ کے ضلعی دفتر کی جانب سے پشاور تاکراچی تک انڈس ہائیوے پرچلائے جانیوالے مسافراور مال بردار گاڑیوں میں سے ماحولیاتی آلودگی کا سبب بننے والے گاڑیوں کیخلاف کارروائیوں کا آغاز کیاگیاہے جس کے تخت مذکورہ روٹ کو استعمال کرنیوالے137مسافرومال بردار گاڑیوں کو اَن فٹ جبکہ محکمہ ٹرانسپورٹ کے ضلعی دفتر کی جانب سے گذشتہ 10مہینوں میں ایک ہزار721گاڑیوں کو فٹ قراردیاجاچکاہے محکمہ ٹرانسپورٹ حکام نے مختلف کارروائیوں کی مد میں آنیوالی آمدنی تقریباً10لاکھ روپے سرکاری خزانے میں جمع کرالئے ہیں محکمہ ٹرانسپورٹ کے ضلعی آفیسر عنایت اللہ خٹک نے بتایاہے کہ گرین پاکستان مہم کے تخت انڈس ہائیوے سمیت ضلع بھرکے بڑے روٹس پرچلائے جانیوالے مسافراورمال بردار گاڑیوں کیخلاف کارروائیوں میں تیزی لائی جاچکی ہے تاکہ زیادہ دھواں چھوڑنیوالے گاڑیوں کیخلاف کارروائیاں کرسکیں اس کے ساتھ ساتھ اَن فٹ گاڑیوں کی نشاہدہی کرسکیں ضلعی آفیسرنے کارروائیوں کی تفصیلات فراہم کرتے ہوئے بتایاہے کہ جنوری میں126‘فروری70‘مارچ110‘اپریل 222‘مئی115‘جون122‘جولائی222‘آگست224‘ستمبر224اوراکتوبرمیں202گاڑیوں کو فٹنس سرٹیفیکٹ جاری کئے ہیں جن میں 200کے قریب سرکاری وغیرسرکاری تعلیمی اداروں میں طلبہ کیلئے استعمال کئے جانیوالے گاڑیاں بھی شامل ہیں جبکہ اب سرکاری دفاتر میں استعمال میں لائے جانیوالے گاڑیوں کے حوالے سے رپورٹ مرتب کرنے کی تیاریاں کررہے ہیں عنایت اللہ خٹک نے کہاہے کہ اگر عوام کی جانب سے تعاون کا سلسلہ جاری رہا تو کارروائیوں میں اضافہ کیاجاسکتاہے‘ دریں اثنا ء ڈپٹی کمشنرعابداللہ خان کاکاخیل نے اسسٹنٹ کمشنر کرک بشیراحمدخان اور ٹریفک پولیس اہلکاروں کے ہمراہ مختلف لاری اڈوں پرچھاپے لگائے اورلاری اڈوں میں مسافروں کو بنیادی سہولیات فراہم کرنے سمیت ٹریفک اہلکاروں کو زیادہ کرائے وصول کرنیوالے کنڈیکٹروں کیخلاف کارروائی کرنے کے احکامات جاری کئے گئے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -